سابق صدرمشرف کا ٹرائل اکتوبر 1999سے ہونا چاہئے،طاہر القادری -
The news is by your side.

Advertisement

سابق صدرمشرف کا ٹرائل اکتوبر 1999سے ہونا چاہئے،طاہر القادری

عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ سابق صدر مشرف کا ٹرائل اکتوبر انیس سو ننانوے سے ہونا چاہیئے، باقی ذمہ داروں کو چھوڑ کر تنہا مشرف کا ٹرائل انتقامی کاروائی ہے۔

عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ قانون سب کے لئے برابر ہونا چاہیئے، کینیڈا سے جاری بیان میں ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ جنرل مشرف کی بیعت کرنے والے سابق چیف جسٹس ، ججز اور دیگر پر بھی آرٹیکل چھ لگایا جائے۔

انھوں نے کہا کہ انتقامی کاروائی سے پوری دنیا میں پاکستان کا عدالتی نظام مشکوک نظروں سے دیکھا جائے گا، انھوں نے کہا کہ ٹرائل میں اُن ججز کو بھی شامل کیا جائے، جنہوں نے پہلے سات سالوں کو جائز قرار دیا تھا۔

دوسری جانب تحریک صوبہ ہزارہ کے قائد بابا حیدر زمان نے کہا ہے کہ ڈاکٹر طاہر القادری کی جانب سے نئے صوبوں کے قیام کے بیان کی تحریک ہزارہ مکمل حمایت کرتی ہے، ڈاکٹر طاہر القادری نے بیان میں پسے ہوئے عوام کے حقوق کی بات کی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں