site
stats
اہم ترین

سانحہ پشاور پرکسی مذہبی جماعت نے احتجاج نہ کیا، الطاف حسین

کراچی: ایم کیو ایم کےقائدالطاف حسین نےکہاہےکہ سرکار دوعالم ﷺکو اللہ نے جو درجہ دے دیا کسی کے بے حرمتی کرنے سےاس میں کمی نہیں آسکتی، یہ کس حدیث میں لکھا ہے کہ چارلی میگزین کے خلاف مظاہرے کرکے ایک دوسرےکا قتل کیاجائے۔

ایم کیوایم کےزیراہتمام بدلتی صورتحال اوراتفاق بین المذاہب کےعنوان سےمکالمے میں الطاف حسین کاکہناتھاکہ ہر مذہب میں کوئی نہ کوئی بزرگ ہوتا ہے اسی طرح ہمارے مذہب میں سرکار دوعالم ﷺہیں۔

الطا ف حسین نے کہا کہ اگر پاکستان میں کسی نےتوہین رسالت مذمت کی تو سب سے پہلے ہم نے کی ، لیکن کوئی گاڑی نہیں جلوائی کوئی گولی نہیں چلوائی۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی لاہور کوئٹہ پشاور یا چاروں صوبوں میں ہم کریں تو کیا کریں کیسے سمجھائیں کہ ایک دوسرے کی جان اور مال کا تحفظ کرو،ایم کیو ایم قائدنے کہا کہ اللہ تعالیٰ قیامت کے روز مسلمان اورغیرمسلم کےحوالےسےفیصلہ کردےگا ۔

انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی فرماتاہےجو لوگ ملک میں فساد کرتے پھریں انکی سزا ہےکہ انہیں سولی پر چڑھا دیا جائے۔

الطاف حسین نےکا کہنا تھا کہ ہمیں موجودہ حالات میں اتفاق سےرہناچاہیے، دہشتگردوں نے مساجد ، امام بارگاہوں، گرجوں، بازاروں اور پشاور کے معصوم بچوں پر حملے کئے جو افسوسناک ہے، دہشتگردی ایک لعنت ہے جسے جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لئے سب کو متحد ہونا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top