The news is by your side.

Advertisement

سانحہ صفورا کا مقدمہ 2دو روز بعد بھی درج نہ ہوسکا

کراچی : سانحہ صفورا کو اڑتالیس گھنٹے گزر جانے کے باوجود بھی ایف آئی آر درج نہیں کی جاسکی۔

صفورا چورنگی کے بدھ کے روز پیش آنے والے افسوسناک سانحہ میں سینتالیس افراد جاں بحق ہوگئے تھے، جس کا مقدمہ سچل تھانے میں تاحال درج نہ ہوسکا ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ سانحہ صفورا کا مقدمہ لواحقین کی مدعیت میں درج کرناچاہتے ہیں لیکن لواحقین کو بار بار بلانے کے باوجود کوئی بھی مقدمہ درج کرانے کو نہیں آیا۔

پولیس حکام نے بتایا کہ عینی شاہدین کی مدد سے ملزمان کے خاکے تیارکرائے جارہے ہیں اور تفتیش میں پیش رفت کیلئے جائے وقوعہ سے جیو فینسنگ کے ذریعے بھی تحقیقات جاری ہے۔

 سانحہ کراچی میں زندہ بچنے والوں سے معلومات بھی لی جا چکی ہیں، جنہوں نے حملہ آوروں کو قریب سے دیکھا ان سے بھی تفتیش کر لی گئی لیکن چھ میں سے ایک دہشتگرد کا خاکہ تیار نہیں کیا جا سکا۔

اگر کسی بڑے افسر سے پوچھا جائے کہ دہشتگردوں نے جس بچی کو زندہ چھوڑ دیا، اس کا نام کیا ہے تو شاید وہ خاموش رہنے کو ہی ترجیح دے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں