ساکنان شہر قائد کے تحت کراچی میں عالمی مشاعرہ منعقد کیا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

ساکنان شہر قائد کے تحت کراچی میں عالمی مشاعرہ منعقد کیا گیا

کراچی: ساکنان شہر قائد کے تحت کراچی میں عالمی مشاعرہ منعقد کیا گیاجس میں مقامی اور بیرون ملک سےآنے والے نامور شعرا نے اپنا کلام پیش کیا۔

ساکنان شہر قائد کے تحت کراچی میں ہونے والے عالمی مشاعرے میں ملکی اور غیر ملکی نامورشعرانےشرکت کی،ممتاز شعرائےکرام میں پروفیسرعنایت علی خان ،امجداسلام امجد،انورمسعود،افتخار عارف،پیرزادہ قاسم، عباس تابش،ذکیہ غزل،اقبال خاور سمیت دیگرشعرانےبھی کلام پیش کیاجبکہ شہریوں کی بڑی تعداد نےمحفل مشاعرہ میں شرکت کی ۔

مجھ کو فرشتہ ہونے کا دعویٰ نہیں مگر
جتنا بُرا سمجھتے ہیں اتنا بُرا نہیں
                                             امجد اسلام امجد

 محفل مشاعرہ میں بھارت سے تعلق رکھنے والے شاعر طاہرفراز رامپوری نےترنم سے کلام پیش کیا،جسکو سامعین نے خوب سراہا ۔

ہم کسی اور سے منصوب ہوئے
کیا یہ نقصان تمھارا نہ ہوا

ساکنان شہر قائد کے تحت منعقد کردہ عالمی مشاعرہ کی صدارت عالمی شہرت یافتہ پاکستان کے مشہور و معروف شاعر افتخار عارف نے کی۔صدر محفل کی جانب سے پیش کردہ اشعار مندرجہ ذیل ہے۔

اس بار بھی دنیا نے ہدف ہم کو بنایا
اس بار تو ہم شہہ کے مصاحب بھی نہیں تھے

مٹی کی محبت میں ہم آشفتہ سروں نے
وہ قرض اتارے ھیں جو واجب بھی نہیں تھے

پیمبروں سے زمینیں وفا نہیں کرتیں
ہم ایسے کون خدا تھے جو اپنے گھر رہتے

عالمی مشاعرے کے منتظمین کو بھی خراج تحسین پیش کیا گیا،مشاعرے میں ڈپٹی اسپیکر سندھ شہلا رضا،سابق چیف سی پی ایل سی احمد چنائے، کمشنر کراچی اور ایم کیو ایم کے رہنما حیدر عباس رضوی سمیت دیگر سماجی اور سیاسی شخصیات بھی موجود تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں