The news is by your side.

Advertisement

سرکلر ڈیٹ کا حجم 325 ارب سے تجاوز کر گیا

اسلام آباد: توانائی کے شعبے کے گردشی قرضے کا حجم تین سو پچیس ارب روپے سے تجاوز کرگیا ہے، آئی پی پیز ایڈوائزی بورڈ کے چیئرمین عبداللہ یوسف نے اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مالی مسائل حل کرکے بجلی کی پیداوار میں پندرہ سو میگاواٹ اضافہ ہوسکتا ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ مالی مسائل کے باعث نجی پاور پلانٹس اپنی پوری پیداواری صلاحیت کا استعمال نہیں کر پا رہے ہیں، ادائیگیوں سے پندرہ سو میگاواٹ تک بحلی پیداوار میں اضافہ کیا جاسکتا ہے، انھوں نے مزید کہا کہ لائن لاسسز اور بجلی چوری ہی در اصل سرکلر ڈیٹ کے باعث ہیں، ان مسائل کے ساتھ زیر گردش قرضوں کا مسئلہ حل نہیں ہوسکتا ہے۔

عبداللہ یوسف کا کہنا تھا کہ وزارت پانی و بجلی لائن لاسسز اور بجلی چوری کی روک تھام میں مکمل طور پر ناکام رہی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں