The news is by your side.

Advertisement

سعودیہ کی جنگ بندی کی پیشکش، حوثی قبائل کو نشانہ بنایا جائے گا

ریاض: یمن کے خلاف سعودی اتحاد کا کہنا ہے کہ اگر حوثی قبائل نےسرحدی علاقوں میں شہریوں کو نشانہ بنایا تو اس کا انتہائی سخت جواب دیا جائے گا۔ یہ بیان سعودی عرب کی جانب سے پانچ روز کی جنگ بندی کے چند گھنٹوں بعد ہی سامنےآیا ہے۔

سعودی اتحاد کے ترجمان جنرل احمد اسیری کا کہنا ہے کہ حوثی قبائل نے اپنی حکمت عملی تبدیل کی ہے اور شہروں کو نشانہ بنارہے ہیں، انہوں نے اس عزم کا بھی اعادہ کیا کہ باغی رہنماوٗں کا پیچھا نہیں چھوڑا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ حوثی قبائل سرحدوں پر حملے کررہے لیکن ہم ہر صورت اپنے شہریوں کے دفاع کو ممکن بنائیں گے، انکا کہنا تھا کہ حوثی باغیوں نے سعودی شہر نجران پر حملہ کیا جس میں 15 شہری زخمی ہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ حوثی قبائل کو شہریوں پر حملے کی بھاری قیمت چکانا ہوگی۔

سعودی اتحاد کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا جب چند گھنٹے قبل سعودی وزیرِ خارجہ عدیل الجبیرنے امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری کے ہمراہ یمن میں جاری جنگ انسانی بنیادوں پرپانچ روز کے لئے بند کرنے کا مشروط اعلان کیا تھا۔

سعودی وزیر کا کہنا تھا کہ اگر حوثی قبائل نے جنگ بندی کا احترام کیا تو انسانی بنیادوں پرپانچ روز کے لئے جنگ بند کی جاسکتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں