The news is by your side.

Advertisement

سلامتی کونسل میں اصلاحات ہونی چاہئیں، دفترخارجہ

اسلام آباد: دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مستقل ارکان کی تعداد بڑھانے سے روایتی امن کونقصان پہنچے گا۔ دفترخارجہ کی ترجمان تسنیم اسلم نے میڈیا بریفنگ میں کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اصلاحات ہونی چاہئیں۔

سلامتی کونسل کے مستقل اراکین کی تعداد بڑھانا امن کے لئے نقصان دہ ہوگا۔ سلامتی کونسل کی کارکردگی کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ کشمیرکا مسئلہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دینا ہے جس پر اقوام متحدہ کی بیس قراردادیں موجود ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت غاصب ہے جو اپنے وزیراعظم نہرو کے بیانات نہیں مانتا کہ کشمیر کا فیصلہ کشمیریوں کی مرضی کے مطابق کیا جائے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ چین کے وزیر خارجہ رواں ماہ پاکستان کا دورہ کریں گے۔ افغان مہاجرین کو رواں سال دسمبرتک واپس بھیج دیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں