سندھ اسمبلی:ایم کیوایم کی اپوزیشن بینچوں کے لئے درخواست جمع -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی:ایم کیوایم کی اپوزیشن بینچوں کے لئے درخواست جمع

کراچی: ایم کیو ایم نے سندھ حکومت سے علیحدگی کے بعد سندھ اسمبلی میں اپوزیشن بینچوں کے لئے درخواست بھی جمع کرادی ہے۔

متحدہ قومی موومنٹ کے پارلیمانی لیڈر سید سردار احمد کی سربراہی میں اراکین اسمبلی کا اجلاس ہوا، جس کے بعد ایم کیو ایم کے رہنماء اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے چیمبر میں پہنچے اور درخواست جمع کرائی۔

ایم کیو ایم کے رہنماء خواجہ اظہار الحسن کا کہنا ہے کہ مذاکرات پر یقین رکھتے ہیں لیکن مفاہمت کے نام پر منافقت پر یقین نہیں رکھتے۔

فیصل سبزواری نے کہا کہ بہت احتیاط سے بات کی، مزید سخت بات ہو سکتی تھی۔

اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیوایم کی ناراضگی وقتی ہے، مل بیٹھ کر غلط فہمیوں کا ازالہ کرلیں گے، اس موقع پر منظور حسین وسان کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کی ناراضگی کی اصل وجہ لوکل باڈیز الیکشن ہے۔

گزشتہ روز متحدہ قومی مومنٹ نے سندھ حکومت سے علیحدگی کا اعلان کیا تھ، ایم کیوایم کے رہنماء خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ اگر ہمیں نفرتوں اور انتقام کی سیاست کرنی ہوتی تو پیپلز پارٹی نے ہمیں سو برس کا سامان دے دیا ہے، لیکن الطاف حسین نے پوری قوم کی ہمت کو جگا کر مہاجر قومی مومنٹ کو متحدہ قومی مومنٹ میں تبدیل کردیا گیا۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ الطاف حسین نے نفرتوں کے خلیج کو محبوتوں کے پل بناکر ختم کیااور جب بات ہمارے قائد پر آجائے تو کارکن سمجھوتہ کرنے کو تیار نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بھٹو کا وارث بھٹو ہوسکتا ہے ذرداری نہیں ،بلاول بھٹو آپ بمبینو سیمنا کے وارث ہوسکتے ہیں پیپلز پارٹی کے نہیں، بلاول بھٹو نے ہمیں راستہ جدا کرنے پر مجبور کردیا، بلاول کی تقریر کے بعد پیپلز پارٹی کے ساتھ چلنے کا جواز ہی پیدا نہیں ہوسکتا، بلاول کے بیان کے بعد کارکنان ممیں غم وغصہ کی لہر دوڑ گئی ہے ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں