The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی کا اجلاس: تھری بچوں کی ہلاکتیں زیرِبحث

سندھ اسمبلی کے اجلاس میں آج بھی تھری بچوں کی بازگشت جاری رہی۔ایم کیو ایم کےسردار احمد نے صحافیوں کی خفیہ امداد کےمعاملے کو اٹھایا جبکہ ڈہرکی میں ہندولڑکی کے مبینہ اغواکے خلاف قرارداد بھی پیش کی گئی۔

تفصیلات ککے مطابق سندھ اسمبلی کا اجلاس اسپیکر آغا سراج درانی کی زیرِصدارت منعقد ہوا، اجلاس کےدوران ایم کیوایم کے رکن اسمبلی محمدحسین کا کہناتھا کہ تھرمیں بچوں کی اموات کا سلسلہ بے قابو ہورہا ہے۔ایک دن میں دس بچوں کی اموات افسوسناک ہیں۔

قائدحزب اختلاف شہریارمہرنےکہا کہ تھرکے معاملے پرتاحال پارلیمانی کمیٹی قائم نہیں ہوسکی۔ اسپیکرآغاسراج درانی کاکہناتھا کہ اجلاس کے بعد پارلیمانی کمیٹی تشکیل دے دی جائےگی۔

ڈہرکی میں بارہ سالہ ہندولڑکی انجلی کےمبینہ اغواکے خلاف قرارداد بھی سندھ اسمبلی میں پیش کی گئی ،پیپلزپارٹی رکن اسمبلی نادر مگسی کا کہنا تھا انجلی کا معاملہ اسلامی تعلیمات کے خلاف ہے۔

جہاں ایسےواقعات ہوں پہلے ہمیں کھڑا ہونا چاہئے۔ فنکشنل لیگ کےنند کمار نےکہا انجلی کی بازیابی کے لیے اقدامات نہ ہونا افسوسناک ہے۔ لعل چند اکرانی نےاسمبلی کو بتا یاانجلی کواغوا کیا گیا تھا تاہم حکومت نے بازیاب کرالیا،اب یہ معاملہ عدالت میں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں