site
stats
اہم ترین

سندھ اور پنجاب بورڈ نے میٹرک کے امتحانات کے نتائج کا اعلان

کراچی : سندھ اور پنجاب بورڈ نے میٹرک کے امتحانات کے نتائج کا اعلان کردیا۔

کراچی ،لاہور، ملتان ، سرگودھا اور فیصل آباد کے میڑک کے امتحانات کے نتائج کا اعلان کردیا گیا، کراچی میں جنرل گروپ کے نتائج میں 25648 امیدواروں نے حصہ لیا، جنرل گروپ میں کامیابی کا تناسب55.18رہا، جنرل گروپ میں پوزیشن حاصل کرنے والی تینوں طلبا حافظہ ہیں ۔ پہلی حافظہ اسنی، دوسری حافظہ لبابہ مستقیم اور تیسری پوزیشن حافظہ غانیہ وقار نے حاصل کی ۔

سائنس گروپ میں 137031 امیدواروں نے حصہ لیا، کامیابی کا تناسب 70.15فیصد رہا، جس میں مروا تنویر نے پہلی ،دوسری ماہ نوررحمان اور تیسری پوزیشن سعد خالد نے حاصل کی۔

لاہورتعلیمی بورڈ کے زیراہتمام میٹرک کے سالانہ امتحانات میں ایک لاکھ پچاسی ہزار امیدواروں نے حصہ لیا تھا، جن میں سے ایک لاکھ 24 ہزار 343 نے کامیابی حاصل کی ہے۔ اس طرح کامیابی کا تناسب 66.94 فیصد رہا،  گورنمنٹ ہائی سکول کاہنہ قصور کے اسامہ قمر نے پہلی، پاک گریژن سکول ننکانہ کے علی حسنین اور کریسنٹ ہائی سکول اقبال ٹاؤن لاہور کی سجیحہ اشرف نے دوسری جبکہ سوسائٹی گرلز ہائی سکول مغلپورہ لاہور کی رمیشا اسلم نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔

فیصل آباد میں امتحانات میں ایک لاکھ23 ہزارامیدواروں نے حصہ لیا۔ کنڑولر امتحانات ڈاکٹر ظفر اقبال کے مطابق امتحانات میں36 ہزار300 امیدوار ناکام ہوئے، سرگودہا میں تعلیمی بورڈ میٹرک کے امتحان میں طلباء وطالبات کی کامیابی کاتناسب  68فیصدرہا جبکہ فیصل آباد میں یہ تناسب70 فیصدرہا۔

گوجرانوالہ میں میٹرک کے امتحانات میں کامیابی کا تناسب70 فیصد رہا،تعلیمی بورڈ کے مطابق پہلی پوزیشن حاصل کر نے والی3 طلبات ہیں، پہلی پوزیشن ردا مریم نے1068دوسری پوزیشن کشف ظفرکے1065تیسری پوزیشن ہادیہ اختر1064نے نمبر حاصل کئے۔

ملتان میں اسامہ ارشد اور صہیب رحمان نے 1068 نمبر حاسل کرکے پہلی پوزیشن لے لی ، ماحسن ارشد رانا نے 1067 نمبر حاصل کرکے دوسری پوزیشن حاصل کی ، محمد تیمور عبدا للہ ، انزل اشفاق ، محمود اسمعیل نئیر نے 1060 نمبر حاصل کرکے تیسری پوزیشن حاصل کی امتحانات میں کل 74565 امیدواروں نے شرکت اور پاس ہونے والے 52448 امیدوار ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top