site
stats
اہم ترین

سندھ میں فوج کی نگرانی میں مردم شماری کرائی جائے،الطاف حسین

کراچی:متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے سندھ میں فوج کی نگرانی میں مردم شماری اور ازسر نو حلقہ بندیاں کرانےکا مطالبہ کردیا۔

کراچی اور حیدر آباد میں صحافیوں سے ٹیلی فونک پریس کانفرنس کرتے ہوئے الطاف حسین نے فوج کی نگرانی میں مردم شماری کرانے،ازسر نوحلقہ بندیاں کرانےکےساتھ ساتھ لوکل باڈیزالیکشن کرانے کا مطالبہ کردیا،متحدہ کےقائد کہتے ہیں کہ بدقسمتی سے پاکستان میں مردم شماری کروانے سے راہ فرار اختیار کی جا رہی ہے۔

الطاف حسین نے ایک بار پھر نئے انتظامی یونٹس کے قیام کو ناگزیز قرار دیتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی بلا جواز انتظامی یونٹس اور نئے صوبوں کے قیام کا مطالبہ نہیں کرتا، اگر انتظامی یونٹس پراعتراض ہے تو سندھ نمبر ون اور سندھ نمبر ٹو بنا دیں۔

متحدہ کے قائد کا کہنا تھا کہ سندھی بولنے والے متحدہ کارکنوں کا اپنے گھروں سے نکلنا مشکل ہوچکا ہے،فوجی قیادت اور انٹلی جنس ایجنسیاں توجہ دیں اور ناانصافیاں روکیں ورنہ عوام کا ردعمل سامنے آئے تو واویلا نہ مچایا جائے،الطاف حسین نے صاف کہے دیا کہ صوبائی اور وفاقی حکومت میں شامل ہونےکا نہ کوئی مذاکراہ اور نہ ہی کوئی ٹاکرہ جاری ہے،گورنرسندھ کے پاس پارٹی رکنیت نہیں وفاق چاہے انھیں رکھے یا فارغ کردے۔

الطاف حسین نے کہا کہ منی لانڈرگ کیس کے فیصلے کا انتظار ہے،ضمیر صاف اور اللہ کے انصاف پریقین ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top