site
stats
پاکستان

سندھ میں گورنر راج کا کوئی امکان نہیں، شرجیل میمن

کراچی : وزیرِ اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے کہا کہ ایم کیو ایم حکومت میں تھی تب بھی ٹارگٹ ایکشن چل رہا تھا،اجمل پہاڑی ا ور صولت مرزا کو گرفتار کیا گیا۔

شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ قیدیوں کے جیلوں کو کرمنل سہولتیں فراہم کرتے تھے، جس کے باعث جیلوں میں سرچ آپریشن کیا گیا اور مجرموں سے موبائل اور لیپ ٹاپ تحویل میں لئے، سندھ میں گورنر راج کا کوئی امکان نہیں، حکومت سمیت تمام ادارے ایک پیج پر ہیں اور دہشتگردی کے خاتمے کیلئے کام کر رہے ہیں۔

صولت مرزا کے الزام پر وزیراطلاعات سندھ شرجیل انعام میمن کا کہنا ہے کہ جیل میں کبھی کسی مجرم کو سہولت نہیں دی ، پیپلزپارٹی نے ہی صولت مرزا کو مچھ جیل بھیجا تھا۔

شرجیل میمن نے کہا کہ  پیپلزپارٹی پر جیل میں موجود ملزمان کی معاونت کا الزام بے بنیاد ہے، ان کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے کبھی کسی مجرم کو سہولت فرام نہیں کی، پیپلزپارٹی کے دور میں ہی جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن کیا گیا اور مجرموں کو سلاخوں کے پیچھے ڈالا گیا۔

شرجیل میمن نے کہا کہ صولت مرزا کو مچھ جیل منتقل کرنے کا فیصلہ پیپلزپارٹی کی حکومت کا تھا، موبائل فونز کی اطلاع پر جیل میں کئی مرتبہ سرچ آپریشن کیا گیا۔

انھوں نے کہا کہ رینجرز پولیس کو فری ہینڈ ہے، حکومت کوئی مداخلت نہیں کرتی، کے الیکٹرک کی زیادتیاں بڑھتی جارہی ہے،  حیسکو سولہ سولہ گھنٹے لوڈشیڈنگ کرتی ہے، صوبہ سندھ کے ساتھ کے الیکٹرک سوتیلی ماں جیسا سلوک کررہی ہے۔

شرجیل میمن نے تاجروں کے ساتھ مل کر کورنگی کے صنعتے علاقے میں صفائی مہم میں حصہ لیا اور پودوں کی پلانٹیشن کی اور سڑکوں پر جھاڑو لگائی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top