The news is by your side.

Advertisement

سندھ ہائیکورٹ:لوکل گورنمنٹ ایکٹ ترامیم غیرقانونی قرار

سندھ ہائی کورٹ نے لوکل گورنمنٹ ایکٹ کی ترامیم کو غیرآئینی قرار دے دیا، بلدیاتی انتخابات کے لئے کی جانے والی نئی حد بندیاں بھی کالعدم ہوگئیں۔

سندھ ہائیکورٹ نے لوکل باڈیز ایکٹ میں کی جانے والی تمام ترامیم کو غیر قانونی قراردے دیا، جسٹس سجاد علی شاہ اور جسٹس فاروق شاہ پر مشتمل دو رکنی بینچ نے فیصلے میں بلدیاتی انتخابات کے لئے کی جانے والی نئی حد بندیوں کو بھی کالعدم قرار دے دیا۔

لوکل گورمنٹ ایکٹ ترامیم کے خلاف متحدہ قومی موومنٹ سمیت دیگر سیاسی اور سماجی تنظیموں نے چیلنج کیا تھا، ایم کیو ایم نے موقف اختیارکیا کہ نئی حد بندیاں آئین سے متصادم ہیں، حکومتی وکیل ایڈووکیٹ جنرل سندھ نےعدالت میں دلالئل دیئے کہ حد بندیاں آئین اور قانون کے مطابق ہیں۔

صوبائی حکومت کو ترامیم کا اختیار ہے،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد گزشتہ ہفتے محفوظ کیا جانے والا فیصلہ سنا دیا ، لوکل گورنمنٹ ایکٹ ترامیم کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں دس سے زائد درخواستیں دائر کی گئیں تھیں، جماعت اسلامی کی جانب سے پورے لوکل گورنمنٹ ایکٹ کو چیلنج کیا گیا ہے، جس پر فیصلہ آنا باقی ہے۔
     

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں