The news is by your side.

Advertisement

سول نافرمانی کا اعلان کردیا ہے، لیکن سول نافرمانی کیاہے

کراچی:عمران خان نےسول نافرمانی کا اعلان کردیا ہے،لیکن سول نافرمانی کیا ہوتی ہےاوراس میں کیا ہوتا ہے

سول نافرمانی کا مطلب حکومت کی رٹ کوچیلنج کرتے ہوئےاس کےاحکامات اور ہدایات نہ ماننا ہے،جس میں ٹیکس، لگان یا موجودہ دورمیں بجلی، گیس اور پانی کےبل نہ دینا شامل ہیں تاکہ حکومت کی آمدنی روک کراسےاپنےمطالبات منوانےکے لیے دباؤ میں لایا جاسکے،جس پر گرفتاریاں اور سزائیں بھی ہوسکتی ہیں۔

اس میں تشدد کا عنصر شامل نہیں ہوتااورعموماًیہ اجتماعی مفادات کےحصول کے لیے کی جاتی ہے تاکہ حکومت وقت پردباؤ ڈال کرعوام کے لیے رعایت حاصل کی جاسکے۔

سول نافرمانی علامتی یا رسمی ہوتی ہے اس میں قانون کو یکسر مسترد نہیں کیا جاتا،لیکن سول نافرمانی کرنے والے افراد اپنے حق کے حصول کے لیے چند مخصوص قوانین پر عمل نہیں کرتے جو حکومت چلانے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں۔

سول نافرمانی کی تحریک چلا کراخلاقی مثال بنائی جاتی ہےتاکہ حکومت وقت کو سیاسی، سماجی یا معاشی تبدیلی لانےپر مجبورکیا جائے۔

“ایک ظالم قوانین کی نافرمانی کرنا کے لئے ایک اخلاقی ذمہ داری ہے.”

 مارٹن لوتھر کنگ جونیئر

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں