site
stats
پاکستان

سینٹ میں اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کی منظوری

اسلام آباد: سینٹ نے وفاقی دارالحکومت مقامی بل 2015 کی کثرت رائے سے منظوری دے دی جبکہ اپوزیشن نے بل کی مخالفت کرتے ہوئے ایوان سے واک آوٹ کیا۔

بل میں دیگرعوامل کے ساتھ اسلام آباد میں لوکل گورنمنٹ کے انتخابات جماعتی بنیادوں پر منعقد کرانے کا فیصلہ کیاگیا۔

وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے بل پر تحریک پیش کی تو اپوزیشن لیڈر اعتزاز احسن نے کہا کہ بل میں بعض نکات متنازعہ ہیں اور استحقاق کمیٹی میں بھی معاملہ زیرغور ہے اس لیے اس پر بحث نہ کی جائے۔

فرحت اللہ بابر نے کہا کہ بل میں اسلام آباد کے عوام کو حقیقی اختیارات نہیں دیے گئے ہیں اس لیے اس پر نظرثانی کی جائے۔ چیرمین نے اپوزیشن کی تجاویز مسترد کرتے ہوئے بل ایوان میں پیش کیا جس کی کثرت رائے سے منظوری دے دی گئی۔

چوہدری نثارعلی خان کا کہنا تھا کہ حکومت نے اپوزیشن کی سفارشات منظور کی ہیں اور سپریم کورٹ کے احکامات بھی سامنے ہیں۔ اس لیے کمیٹی کی سفارشات منظور کی جائیں۔ چیرمین نے کہا کہ وزیرداخلہ اپنا ریکارڈ درست کریں۔ سپریم کورٹ نے کوئی ہدایت نہیں دی ہے اور سپریم کورٹ سینیٹ کو ہدایت نہیں کرسکتی۔

سینیٹ نے کیپٹل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے قیام کا بل بھی منظور کیا جبکہ تجارتی حفاظتی تدابیرآرڈیننس، اینٹی ڈمپنگ ڈیوٹی آرڈیننس کے علاوہ نیشنل ٹیرف کمیشن بل 2015 پر متعلقہ کمیٹی کی رپورٹس بھی ایوان میں پیش کی گئیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top