سینیٹ الیکشن کے بعد ہارس ٹریڈنگ کی صدائیں بلند -
The news is by your side.

Advertisement

سینیٹ الیکشن کے بعد ہارس ٹریڈنگ کی صدائیں بلند

اسلام آباد: انتخابات میں ایسی ہارس ٹریڈنگ ہوئی کہ لوگ چپ نہ رہ سکے،کہیں کسی نے مک مکا کا الزام لگا یا تو کہیں کسی کو سات ووٹ غائب ہونےپر حیرت تھی۔

سینیٹ انتخابات کے معرکہ میں ہارس ٹریڈنگ کی حوصلہ شکنی کے لئے سب ہی متحد تھے، لیکن الیکشن کے بعد ہارس ٹریڈنگ کی صدائیں شروع ہوگئی۔

مسلم لیگ فنکشنل کے رہنما شہریار مہر کا کہنا تھا کہ ہارس ٹریڈنگ بھرپور طریقے سے ہوئی۔

 پیپلز پارٹی کے رہنما ندیم افضل چن کا کہنا تھا کہ آٹھ ووٹ تھے پھر ستائیس کیسے پڑے،ان کا کہنا تھامسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی نے مک مکا کیا ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما مشاہد اللہ نے بھی تصدیق کی کہ پیپلز پارٹی کے امیدوار کو بیس کے بجائے ستائیس ووٹ ملے۔

لیگی رہنما راجہ ظفر الحق نے ووٹ ٹوٹنے کو غلطی قرار دیا،کچھ بھی ہو ملک میں ہرالیکشن کے بعد دھاندلی کا شور ضرور ہوتاہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں