The news is by your side.

Advertisement

شاہراہ دستور پرہلاکتیں، وزیرِاعظم پر مقدمے کا حکم چیلنج

اسلام آباد: وزیرِاعظم سمیت گیارہ شخصیات کے خلاف مقدمے کا حکم سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا گیا ہے، پی اے ٹی نے وزیرِاعظم سمیت اکیس افراد کی گرفتاری کے لئے لاہور ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی ہے۔

سپریم کورٹ میں اٹارنی جنرل کی جانب سے درخواست دائرکی گئی۔ جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ شاہراہِ دستور پر ہلاکتوں پر سیشن جج کا انتظامیہ کے خلاف ایف آئی آر کا حکم غیر قانونی ہے، سیشن جج نے اپنے اختیارات سے تجاوز کیا ہے۔

اٹارنی جنرل نے اعلیٰ عدالت سے استدعا کی کہ سیشن جج کا حکم کالعدم قرار دیا جائے۔

اسلام آباد کی عدالت نے پی اے ٹی کی درخواست پر شاہراہِ دستور پر تین افراد کے قتل کا مقدمہ وزیرِاعظم سمیت گیارہ شخصیات کے خلاف درج کرنے کا حکم دیا تھا،جس کے بعد مقدمہ درج کر لیا گیا تھا۔

دوسری جانب پاکستان عوامی تحریک نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ملزمان کی گرفتاری کیلئے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ عدالت کے حکم پر وزیرِاعظم اور وزیرِاعلٰی سمیت اکیس افراد کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا لیکن ابھی تک نہ تو کسی ملزم کو گرفتار کیا گیا نہ تفتیش کی گئی، ملزمان کے خلاف کارروائی کی بجائے انہیں پروٹوکول دیا جا رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں