The news is by your side.

Advertisement

شیخ رشید کی بابر غوری سے ملاقات،اہم امور پرتبالہ خیال

کراچی: عوامی مسلم لیگ کے صدر شیخ رشید اور ایم کیو ایم کے رہنما بابرغوری کی کراچی میں اہم ملاقات ہوئی ملاقات میں ملک کی اہم سیاسی صورتحال اور تیس نومبر کے جلسے کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔

شیخ رشید نے ایم کیو ایم کی قیادت کو کپتان کا اہم پیغام بھی پہنچایا۔ ملاقات کے بعد اے آروائی سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشیدکا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم اورالطاف حسین سے میرے دیرینہ تعلقات ہیں ۔

پاکستان تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کا مستقبل میں اتحاد ہوگا یا نہیں اس حوالے سے کچھ نہیں کہہ سکتا لیکن میری خواہش ہے کہ تمام اپوزیشن جماعتیں مستقبل میں مل کر کام کریں ان کا کہنا تھا کہ میری پارٹی عمران خان کی پارٹی سے علیحدہ ہے لیکن میری پالیسی اور نظریہ وہی ہے جو عمران خان کا ہے۔

اس موقع پر بابر خان غوری کا کہنا تھا کہ سیاسی صورتحال اور تیس نومبر کے حوالے سے ملاقات میں تفصیلی بات چیت کی ہے لیکن شیخ رشید نے تیس نومبر کے جلسہ کی باضابطہ کوئی دعوت نہیں دی وقت کی ضرورت ہے کہ تمام سیاسی جماعتوں کے آپس میں رابطہ ہونے چاہئے ۔

ایم کیو ایم کے تمام جماعتوں سے رابطے ہیں سیاست میں اختلافات ضرور ہوتے ہیں لیکن کسی جماعت کیلئے دروازے بند نہیں ہوتے بابر غوری نے کہا کہ الیکشن ریفارمز نظام کی تبدیلی اور شفاف الیکشن ایم کیو ایم کی بھی ڈیمانڈ ہے ۔

تیس نومبر کے حوالے سے بابر غوری کا کہنا تھا کہ حکومت کو تشدد کا راستہ اختیار نہیں کرنا چاہئے معاملات کو بات چیت کے ذریعے ہی حل کیا جانا چاہئے ۔

بابر غوری نے کہا کہ اپوزیشن کی پارٹیاں مصلحت کا شکار ہوتے ہوئے حقیقی اپوزیشن کا کردار ادا کر رہی ہیں اور نہ ہی اپوذیشن جماعتوں کو آن بورڈ لیا جارہا ہے۔

اٹھارویں ترمیم میں کئی غلطیاں ہوئی ہیں الیکشن کمیشن کی تقرری کے معاملے پر صرف اپوزیشن لیڈر اور لیڈر آف دی ہاوس کے ساتھ ساتھ حکومتی اور اپوزیشن جماعتوں کے پارلیمانی لیڈروں کو بھی آن بورڈ لینا چاہئے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں