The news is by your side.

Advertisement

ضرورت پڑی توآئینی ترامیم بھی لاسکتے ہیں، اسحاق ڈار

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ایسی ترامیم لانا چاہتے ہیں جس سے آئندہ انتخابات کو شفاف بنایا جا سکے۔

انتخابی اصلاحاتی کمیٹی کےاجلاس کی صدارت کرتے ہوئےانکا کہنا تھا کہ آئندہ انتخابات کو شفاف بنانے کیلیےضرورت پڑنے پرآئینی ترامیم بھی لا سکتےہیں، انہوں نے بتایاکہ کمیٹی کےسامنےاب تک عوام کیجانب سےدو سو نوےسفارشات پیش ہوئیں، اسحاق ڈار نے بتایاکہ انتخابی اصلاحات کےقواعدکوحتمی شکل دیدی گئی جبکہ نادرااور پرنٹنگ حکام کوآئندہ اجلاس میں طلب کرلیا ہے، یکم ستمبرتک اسٹیک ہولڈرزسےاصلاحات طلب کرلیں۔

اس موقع پرسیکریٹری الیکشن کمیشن نےاجلاس کوبتایاکہ افضل خان کےالزامات پرالیکشن کمیشن کااجلاس کل ہو گا، سیکریٹری الیکشن کمیشن کے مطابق تمام اصلاحات کے پیکجز انتخابی اصلاحاتی کمیٹی کے سامنے پیش کیے ہیں، نئے قوانین کا مسودہ بھی کمیٹی کو دیدیا ہے جبکہ الیکشن کے بعدکمیشن کی تین سو سولہ سفارشات کاحتمی فیصلہ پارلیمنٹ کریگی۔

سیکریٹری نےمطالبہ کیاکہ الیکشن کمیشن کےفراہم کردہ قوانین کوآئینی شکل دیجائے،بائیومیٹرک سسٹم کیلیےقانون سازی کیجائےاور بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کوووٹ کاحق دیاجائے، سیکریٹری الیکشن کمیشن نےاجلاس کوبتایاکہ الیکٹرونک ووٹنگ سے انتخابی مقدمات ختم ہو جائیں گے جبکہ نئی حلقہ بندیاں بھی ضروری ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں