The news is by your side.

Advertisement

طاہرالقادری کادھرنا ملک گیراحتجاج میں تبدیل کرنیکااعلان

اسلام آباد: ڈاکٹرطاہرالقادری نے عید الاضحیٰ کے بعد انقلابی دھرنے کو ملک گیراحتجاج میں تبدیل کرنے کا اعلان کردیا۔

اسلام آباد میں انقلابی دھرنے کے شرکاء سے خطاب میں پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ اب اس دھرنے کو ملک گیرتحریک بنانا ہوگا، انقلابی دھرنے کوگھرگھر پہنچانا ہوگا، دھرنے کو گلی گلی شہرشہر میں پہنچانا ہوگا، مظلوم آواز بلند کرنے کےلئے انقلاب مارچ کے دھرنے میں آرہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پولیس کو معلوم ہے کہ حکمران انہیں کچھ نہیں کہیں گے، ملک پولیس اسٹیٹ بن گیا ہے اوردہشتگردی کی انتہا ہوگئی ہے، کوئی چوری پولیس کے سپورٹ کے بغیرنہیں ہوسکتی ہے، جس ملک سے عدل وانصاف اٹھ جائے اس ملک کا باقی رہ جانا ممکن نہیں ہوتا۔

طاہرالقادری نے اعلان کیا کہ عید الاضحیٰ کے بعد لوگوں کا سمندر لے کرشہرشہرجاؤں گا، دھرنا ملک گیراحتجاج میں تبدیل ہوگا، ن لیگ کے ایم پی اے سیلاب متاثرہ علاقوں میں گئے تو وہاں گونوازگوکے نعرے لگے۔

ان کا کہنا تھا کہ کہاں ہے جمہوریت جوغریبوں کوعلاج مہیا کرے، کیا جمہوری حکومت نےعوام کوتعلیم دی؟ جی ڈی پی میں تعلیم کا حصہ کسی نے بڑھایا ہے؟ جونظام عوام کو تحفظ نہیں دے سکتا اس پرقوم کیوں اعتماد کرے، جی ڈی پی میں کم ازکم 10 سے 12 فیصد تعلیم پرخرچ ہونا چاہئے، تعلیمی ایمرجنسی لگا کرتعلیم پر 20 فیصد حصہ بڑھانا چاہیئے، جمہوریت کا فرض ہے لوگوں کو انصاف ملے ،ہمیں ایسا نظام چاہیئے جہاں ظلم نہ ہو ۔

دھرنے کے شرکاء سے خطاب کے دوران طاہرالقادری نے کسانوں کے ساتھ اظہار ہکجہتی بھی کیا، انہوں نے کہا کہ پاکستان زرعی ملک تھا جیسے تباہ کردیا گیا، آج پنجاب کا کسان سڑکوں پرآگیا ہے، ایک ایکڑ میں کسان کو ساڑھے 22 ہزار کا نقصان ہوتا ہے، انقلاب مارچ میں کسانوں نے کپاس کو بھی آگ لگا دی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں