عالمی ادارہ صحت نے ایبولا وائرس کوایمرجنسی قراردے دیا -
The news is by your side.

Advertisement

عالمی ادارہ صحت نے ایبولا وائرس کوایمرجنسی قراردے دیا

عالمی ادارہ صحت نے مغربی افریقہ سے پھیلنے والی بیماری ایبولا کو صحت کی بین الاقوامی ایمرجنسی قراردے دیا ہے اورکہا ہے کہ وائرس کی شدت کے باعث اس کے نتائج سنگین ہوسکتے ہیں۔

اقوامِ متحدہ کی ذیلی تنظیم عالمی ادارۂ صحت نے مغربی افریقہ سے پھیلنے والی بیماری ایبولا کو صحت کی بین الاقوامی ایمرجنسی قرار دے دیا ہے،ایبولا وائرس متاثرہ شخص کی جسمانی رطوبتوں کے ذریعے دوسرے لوگوں تک پھیل سکتا ہے۔ اس سے ابتدا میں زکام جیسی علامات ظاہر ہوتی ہیں اور بعد میں آنکھوں اور مسوڑھوں سے خون رسنا شروع ہو جاتا ہے،جسم کے اندر خون جاری ہو جانے سے اعضا متاثر ہو جاتے ہیں۔

وائرس سے متاثرہ نوے فیصد تک لوگ ہلاک ہو جاتے ہیں۔ایبولا وائرس نے مغربی افریقہ میں لائیبیریا،گنی، سیرا لیون اور نائجیریا کو سب سے زیادہ متاثر کیا ہے، اس سال مغربی افریقہ میں ایبولا سے تین سو نوے افرادہلاک ہوچکے ہیں۔عالمی ادرارہ صحت ڈبلیو ایچ او کے مطابق ایبولا وائرس متاثرہ علاقوں میں اب تک نو سو بتیس جانیں لے چکا ہے، ہلاک ہونے والے متاثرہ افراد میں سے دو سو بیاسی کا تعلق لائیبیریا سے تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں