The news is by your side.

Advertisement

عدالت جاتے ہوئے پرویزمشرف کی طبیعت واقعی خراب ہوئی تھی، چوہدری نثار

وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے تصدیق کردی، سابق صدر پرویز مشرف کی عدالت جاتے ہوئے طبعیت واقعی خراب ہوئی تھی، اے ایف آئی سی پرویز مشرف کے اسٹاف کا اپنا انتخاب تھا۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے بتایا کہ عدالت جاتے ہوئے پرویز مشرف کی طبیعت گاڑی میں واقعی خراب ہوئی تھی۔

ان کی گاڑی میں موجود ایس پی سیکیورٹی نے انھیں اسلام آباد کے تین اسپتالوں میں لے جانے کا کہا۔ لیکن مشرف کے اسٹاف نے انھیں اے ایف آئی سی لے جانے کا کہا۔ وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کی اہلیہ نے ان کا نام ای سی ایل سے نکلوانے کیلئے درخواست دی تھی،  لیکن مشرف جب تک عدالت میں پیش نہیں ہوجاتے ان کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالا جاسکتا۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ طالبان کیے ساتھ امن مذاکرات پہلی ترجیح ہیں، طالبان سے مذاکرات اورآپریشن دونوں ہی مشکل کام ہیں، طالبان گروپس کسی ایک مقام پر نہیں، آپریشن کریں توکہاں کریں، امن مذاکرات پر تنقید کرنے والے مسئلے کا پائیدار حل بھی بتادیں، وزیرداخلہ نے واضح کیا کہ مذاکرات کا جواب گولی سے دینے والوں کیخلاف جنگ کی جائے گی۔
    
   

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں