The news is by your side.

Advertisement

عدالت کے حکم پر پولیس کا محاصرہ ختم، ذوالفقار مرزا روانہ

کراچی: سندھ ہائی کورٹ کے حکم پر پولیس نے انسداد دہشتگردی عدالت کا محاصرہ ختم کر دیا،سابق وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا دس گھنٹے کی خود اسیری ختم کر کےگھر چلےگئے۔

ذوالفقار مرزا کی خود اسیری کا ڈرامہ پولیس کی واپسی کے ساتھ ختم ہو گیا انہوں نےخود کو عدالت میں دس گھنٹے قید رکھا۔، ذوالفقار مرزا کی اہلیہ کا کہنا تھا کہ ان کے شوہر کی جان کو خطرہ ہے۔

 عدالت نے ذوالفقار مرزا کی عبوری ضمانت میں تیس مئی تک توسیع کردی، مقدمات کے سیشن عدالت میں منتقلی کی درخواست کی سماعت پچیس مئی کو ہوگی۔

ذوالفقار مرزا عدالت اپنی ضمانت میں توسیع کرانے آئے تھے،لیکن ذوالفقار مرزا نےخو دکو عدالت میں قید کر لیا۔

ڈاکٹر ذوالفقار مرزا کے وکلا ء کا کہنا ہے کہ ڈی آئی جی ڈاکٹر جمیل نے ذوالفقار مرزا کو گھر جانے دینے کے حوالے سے عدالتی احکامات وصول کرنے سے انکار کر دیا تھا اور پولیس نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کا گھیراؤ کر لیا تھا ۔

پولیس کمانڈوز کے ساتھ بکتر بند گاڑی بھی موجود تھی، تاہم سنددھ ہائیکورٹ سے احکامات موصول ہونے کے بعد پولیس نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کا گھیراؤ ختم کر دیا اور ذوالفقار مرزا دس گھنٹے بعد واپس گھر کی طرف روانہ ہو گئے۔

سندھ ہائی کورٹ نے انسداد دہشت گردی عدالت کا گھیراؤ کرنے پر آئی جی سندھ اور ڈی آئی جی ساؤتھ کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں