site
stats
عالمی خبریں

عراق اور شام کشیدگی سےچودہ ملین بچےمتاثر ہوئے ہیں، یونیسیف

عمان: اقوام متحدہ نے کہا کہ عراق اور شام میں جاری کشیدگی سے چودہ ملین بچے تنازعات کا شکار ہیں جن کی صورتحال بہتر بنانے کے لئے اقدامات کی ضرورت ہے۔

یونیسیف کی رپورٹ کے مطابق مشرق وسطی میں ایک کروڑ چالیس لاکھ بچے تنازعات سے متاثر ہو رہے ہیں۔ شام اور عراق میں جاری کشیدہ صورتحال کے باعث سب سے زیادہ بچے متاثر ہوئے۔

 یونیسیف کے مطابق متاثرہ بچوں میں ایک بڑی تعداد ان بچوں کی ہے جو بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں، جن میں صحت اور تعلیم جیسی سہولتیں بھی شامل ہیں۔

یونیسیف نے ان بچوں کی صورتحال بہتر بنانے کے لیے اقدامات پر زور دیا ہے، رپورٹ کے مطابق قریب دو ملین شامی بچے ہمسایہ ریاستوں لبنان، ترکی، اردن اور دیگر ممالک میں بطور مہاجرین رہ رہے ہیں۔

یونیسیف کا کہنا ہے کہ  عراق میں جاری کشیدگی سے 2.5 لاکھک بچے بے گھر ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ  یونیسیف کے سال 2014 کے اختتام پر جاری کی جانے والی رپورٹ کے مطابق رواں سال ایک اندازے کے مطابق بیس کروڑ تیس لاکھ بچے ایسے ممالک یا علاقوں میں ہیں، جہاں مسلح تصادم جاری ہے۔

رپورٹ کے مطابق سینٹرل افریقن ریپبلک، عراق، جنوبی سوڈان، فلسطین، شام اور یوکرین میں ڈیڑھ کروڑ بچے پُرتشدد کارروائیوں کے درمیان پھنسے ہوئے ہیں جبکہ مارے جانے والے بچوں کی اکثریت یا تو اسکول میں تعلیم حاصل کرنے کے دوران یا پھر گھروں میں سوتے ہوئے حملوں کا نشانہ بنی ۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top