The news is by your side.

Advertisement

عزیر بلوچ کی حوالگی کیلئے یواے ای حکام کا خط

دبئی: کالعدم امن کمیٹی کے سرغنہ عذیر بلوچ کی حوالگی کے لئے یواے ای حکام نے حکومت پاکستان کو خط لکھ دیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کی حکومت کراچی پولیس کو مطلوب گینگ وار عذیر بلوچ کی حوالگی پر راضی ہوگئی ہیں، یو اے ای حکام نے حکومت پاکستان کے نام خط میں عذیر بلوچ کو پاکستانی تحویل میں دینے کی پیشکش کی ہے۔

دبئی میں گرفتار کالعدم امن کمیٹی اور لیاری گینگ وار کے سرغنہ کی پاکستان حوالگی کے تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کی ٹیم عزیزبلوچ کو لینے کے لئے کل یو اے ای جائے گی، ایف آئی اے نے سندھ پولیس کے افسر کو ساتھ جانے کیلئے کہا ہے، ایف آئی اے حکام نے سندھ پولیس افسر کو عزیر بلوچ سے متعلق ریکارڈ ساتھ لیکر چلنے کی درخواست کی ہے۔

واضح رہے کہ یو اے ای حکومت کی رضا مندی کے بعد عزیر بلوچ کے مقدمات پر مبنی پر ایک فائل متحدہ عرب امارات بھیج دی گئی ہے، جس کے بعد ملزم عزیر بلوچ کو پاکستان کے حوالے کرنے کا امکان ظاہر کیا گیا تھا۔

انتیس دسمبر دو ہزار چودہ کوعزیر بلوچ کو مسقط سے دبئی پہنچنے پر انٹر پول کی جانب سے گرفتارکیا گیا تھا، سندھ حکومت نے عذیر بلوچ کو مطلوب قرار دے کر اس کے ریڈ وارنٹ جاری کر رکھے ہیں۔

عزیر بلوچ پولیس اور رینجرز اہلکاروں کے قتل ، اقدام قتل، اغوا برائے تاوان، بھتہ خوری اور سو سے زائد دیگر سنگین جرائم کی وارداتوں میں ملوث ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں