عمران خان اور طاہر القادری آج سپریم کورٹ میں پیش ہوں گے -
The news is by your side.

Advertisement

عمران خان اور طاہر القادری آج سپریم کورٹ میں پیش ہوں گے

اسلام آباد:  عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری آج سپریم کورٹ میں پیش ہوں گے ، دونوں رہنمائوں کو عدالت میں طلبی کے نوٹس موصول ہوچکےہیں۔

سپریم کورٹ میں امن و امان اور دھرنوں سے متعلق پٹیشن کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خانا ور پاکستان عوامی تحریک کے قائد ڈاکٹر طاہر القادری کو طلب کیا ہے ، اس دوران عدالت کا کہنا تھا کہ بنیادی حقوق کیلئے راستے بند کئے جا سکتے نہ حکومت کو کام سے روکا جا سکتا ہے۔

عدالت مین طلب کئے جانے کے سمن عمران خان کی جانب سے سیکریٹری تحریک انصاف نے جبکہ ڈاکٹر طاہر القادری کی جانب سے خرم نواز گنڈا پور نے وصول کئے تھے، دونوں رہنما آج سپریم کورٹ میں اپنے دھرنوں کے حوالےسے اپنا اپنا موقف پیش کریں گے۔

گزشتہ روز سپریم کورٹ نے راستے بند کرنے اور پارلیمنٹ کے گھیرائو سے متعلق پٹیشن کی سماعت کرتے ہوئے دونوں رہنمائوں کو عدالت میں اپنے موقف کی وضاحت پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

سپریم کورٹ میں ممکنہ ماورائے آئین اقدام اوردھرنوں سے متعلق درخواستوں کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں عدالتی بینچ نےکی۔ اعلیٰ عدالت نےدلائل سُننے کے بعد عمران خان اور ڈاکٹرطاہر القادری کونوٹسز جاری کردیئے اور عدالت میں اپنے موقف کی وضاحت کرنے کا حکم دیا۔

چیف جسٹس ناصرالملک نے کہا کہ راستے بند ہونے کے باعث متعدد وکلا عدالت نہیں پہنچ سکے، جسٹس جواد ایس خواجہ نے ریمارکس میں کہا احتجاج کرنا کسی کاحق ہے تو وہ اس طرح نہیں ہوسکتا ہے کہ دوسرے کی حق تلفی ہو، آئین میں دیئے گئے بنیادی حقوق کی آڑ میں غیر قانونی طور پرحکومت کے خاتمہ کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔

انھوں نے کہا کہ آئین میں حکومت ختم کر نے کےطریقےموجود ہیں۔ اُن سے ہٹ کر کوئی بھی طریقہ غیر آئینی ہوگا، کسی کو اجازت نہیں دی جاسکتی کہ آزادی اظہار رائےکی آڑ میں انتشار پھیلانےکی کوشش کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں