site
stats
اہم ترین

عمران خان کا آزادی مارچ سے خطاب، نواز شریف ضمیروں کے سوداگرہیں

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان آزادی مارچ کے شرکاء سے خطاب کررہے ہیں اور ان کا کہنا تھا کہ میں اپنی وجہ سے نہیں کارکنوں کی وجہ سے واپس گیا وہ تھکے ہوئے تھے اور بارش میں بھیگے ہوئے تھے۔

انہوں نے کارکنوں سے کہا کہ ان ہیں معلوم ہے کہ آپ مزید چالیس گھنٹے جاگ سکتے ہیں لیکن یہ شریف برادران نہیں جاگ سکتےاللہ نے بارش کارکنوں کو آزمانے کے لئے بھیجی۔

ان کا کہنا تھا کہ قوم کا جذبہ اور جنون سب کےسامنے ہے اور جس قوم میں ایسا جذبہ ہو نہ تو اسے کسی کے سامنے جھکنے کی ضرورت تھی نہ ہی کسی سےقرضے لینے کی لیکن حکمران چور اور بزدل تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کی تو ایف آئی آر کٹنے والی ہے اور الیکشن کی دھاندلی کی کہانی منظر عام پر آنے کے بعد انہیں نواز شریف کا مستقبل بھی اندیھیرے میں نظر آرہا ہے آج ساری رات ہم یہاں آزادی کا جشن منائیں گے۔

انہوں نے جنگ جیو گروپ کے مالک میر شکیل الرحمن کو مخاطب کر کے کہا شرم کرو تم نے ٹی وی پر پروپیگنڈا شروع کررکھا ہے تم کہتے تھے کہ عمران خان ڈیل کرلے گا لیکن سن لو کہ تم اب پیسے لے کر نواز شریف کو بچا نہیں سکتے۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کا دوسرا نام ’’ضمیروں کا سوداگر‘‘ ہے لیکن وہ ان کے ضمیر کا سودا نہیں کرسکتا۔

انہوں نے اعلان کیا کہ تحریک انصاف حکومت میں آئے گی تو قرضہ لے کر قوم کو بھکاری نہیں بنائیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان وزیر اعظم بن کر عوام سے جھوٹ نہیں بولے گا ، انکا دعویٰ تھا کہ تحریک انصاف کی حکومت نے ایک سال میں خیبر پختونخواہ کی پولیس میں سے کرپشن ختم کردی ، اس ملک میں سب سے زیادہ ظلم پولیس کرتی ہے۔ نئے پاکستان میں پولیس گلوں بٹوں کو نہیں پالے گی۔

عمران خان نے کہا کہ اس حکومت نے بجلی چوروں کو پانچ سو ارب روپے دئے ان سب کا احتساب ہوگا دیر لگے گی لیکن ہم سستی بجلی بنائیں گے۔

انہوں نے کہا نواز شریف نے تو جیم خانہ میں کبھی اپنے ایمپائر کھڑے کئے بغیر کرکٹ نہیں کھیلی انہوں نے کہا کہ عوام بتائے کہ کبھی عمران خان نے اپنے ایمپائر کھڑے کئے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top