عوامی تحریک کےکارکنان اور پولیس میں تصادم، کارکنوں نےرکاوٹیں ہٹادیں -
The news is by your side.

Advertisement

عوامی تحریک کےکارکنان اور پولیس میں تصادم، کارکنوں نےرکاوٹیں ہٹادیں

لاہور: پاکستان عوامی تحریک کےپرعزم کارکنوں نےماڈل ٹاؤن کےراستوں پرکھڑی رکاوٹیں ہٹائیں ۔

پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں اور پولیس میں تصادم نے فیصل ٹاؤن کاعلاقہ میدان جنگ بنادیا، پولیس کی شیلنگ سے درجنوں افراد بے ہوش ہوگئے، تین روزہ محاصرے کے بعدعوامی تحریک کے کارکنوں کے صبر کاپیمانہ لبریز ہواتو انھوں نے ماڈل ٹاؤن کے راستوں پرکھڑی رکاوٹیں ہٹا دیں،پاکستان عوامی تحریک کے کارکن رکاوٹیں ہٹاتےہوئےاورنعرے لگاتے ہوئے آگے بڑھتے رہے، لیکن پھر پولیس نے شیلنگ کی، جس سے درجنوں کارکن بے ہوش ہوگئے۔

پاکستان عوامی تحریک کے رہنما رحیق عباسی کا کہنا تھا کہ ہم امن کو سبوتاژ نہیں کرنا چاہتےہیں، تین دنوں سے صبر کیا ہمیں محصور کردیا گیا ہے، کارکنان پُرامن ہیں صرف رکاوٹیں ہٹائی گیئں، حکومت کو 3 دن پہلے رکاوٹ ہٹانے کا کہا تھا۔ کارکنان نے ماڈل ٹاؤن کے علاقہ مکینوں کی پریشانی دور کرنے کیلئے پولیس کے کنٹینر ہٹا کر ٹریفک بحال کر دی، ماڈل محاصرے کی وجہ سے کھانے پینے کی اشیاء کی قلت پیدا ہوگئی تھی ،جس پر کارکن مشتعل ہوگئے، کارکنان نے خود ہی کنٹینرز اور خار دار تاریں ہٹانا شروع کردی، ان کا کہنا تھا کہ پولیس خود بھاگی ہے ۔

پولیس نے عوامی تحریک کے کارکنان کو منتشر کرنے کے لئے شیلنگ اور لاٹھی چارج کردیا ، پولیس ذرائع کے مطابق ماڈل ٹاون میں پولیس کی مزید نفری طلب کر لی گئی ہے، 400 سے زیادہ پولیس اہلکار ماڈل ٹاؤن میں موجود، مزید نفردی طلب کر لی گئی، کارکنان کو منتشر کرنے کے لیے ماڈل ٹاؤن کی لائٹیں بند کر دی گئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں