عوام کو گمراہ کرنیولے بوری بند لاشوں پر پردہ ڈالنا چاہتے ہیں، منورحسن -
The news is by your side.

Advertisement

عوام کو گمراہ کرنیولے بوری بند لاشوں پر پردہ ڈالنا چاہتے ہیں، منورحسن

لاہور: جماعت اسلامی کے سابق امیر سید منورحسن نے کہا ہے کہ مسلمانوں کیلئے جہاد اور قتال صرف اور صرف فی سبیل اللہ پر ہی جائز ہے، ان کے بیان پر سیخ پا ہوکر عوام کو گمراہ اور متنفر کرنے کی ناکام سازش کرنے والے دراصل بوری بند لاشوں اور بھتہ خوری جیسی کرتوتوں پر پردہ ڈالنا چاہتے ہیں۔

منصورہ لاہور سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق سید منور حسن کا کہنا تھا کہ جہاد فی سبیل اللہ ہی جائز ہے،اس کے علاوہ اپنی ذات، اقتدار،عصبیت اور مال و دولت سمیت ہر صورت میں وہ فسادہے، مغربی طاقتوں کے غلام اور ان کے نوالوں پر پلنے والوں کا بس نہیں چلتا ورنہ جہادی آیات کو قرآن سے نکال دیتے۔

 سید منورحسن نے کہا کہ وہ جہاد فی سبیل اللہ، قتال فی سبیل اللہ اور انفاق فی سبیل اللہ کی بات اس لئے کرتےہیں کہ احکام الہیٰ کی پابندی ہوسکے، اگر افغان معاشرے میں جہاد اور قتال فی سبیل اللہ عام نہ ہوتا تو برطانیہ روس اور اب امریکہ وہاں سے شکست کھا کر نہ نکلتا۔

 سابق امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے دشمن کے مقابلے میں اپنے گھوڑے ہر وقت تیار رکھنے کا جو حکم دیا ہے وہ اسی لئے ہے کہ ہم اپنے دشمن سے غافل نہ ہوں، ان کے بیان پر سیخ پا ہوکر عوام کو گمراہ اور متنفر کرنے والے دراصل بوری بند لاشوں اور بھتہ خوری جیسی کرتوتوں پر پردہ ڈالنا چاہتے ہیں، اللہ کے حکم کی بجاآوری میں کیے جانے والے کام کو پوری دنیا بھی غلط ثابت نہیں کرسکتی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں