site
stats
سندھ

غیر قانونی شادی ہالز کا خاتمہ کردیں گے، شرجیل میمن

کراچی : وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ شرجیل انعام میمن نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں سندھ بھر میں سرکاری زمینوں، کھیلوں کے میدان، پارکس سمیت رفاہی و فلاہی پلاٹس پر قائم تجاوزات اور بالخصوص ان پر قائم شادی ہالز کا خاتمہ کرکے ہی دم لیں گے۔

اپنے دفتر میں اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شرجیل میمن کاکہنا تھا کہ اب تک جن جن غیر قانونی شادی ہال مالکان نے ازخود اپنے شادی ہالز ختم نہیں کئے ہیں ان کو 24 گھنٹے کی مہلت دی جاتی ہے، جس کے بعد نہ صرف ان مالکان کے خلاف مقدمات درج کرائیں جائیں گے بلکہ ان کے شادی ہالز کو مسمار کرکے اس میں موجود تمام سامان کو ضبط کرلیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ سینٹرل، ایسٹ اور کورنگی میں کارروائی کرکے درجنوں شادی ہالز کو مسمار کیا گیا ہے لیکن اب بھی متعدد غیر قانونی شادی ہالز اب بھی قائم ہیں، جس پر متعلقہ ڈی ایم سیز کے ایڈمنسٹریٹرز کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔

صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ شہر کراچی میں مختلف ڈسٹرکٹ میں رفاہی و فلاہی زمینوں، کھیلوں کے میدان اور پارکس میں قائم شادی ہالز کے خاتمے اور مختلف شادی ہالز کو سیل کئے جانے اور درجنوں کو مسمار کرکے ان کا سامان ضبط کئے جانے کی رپورٹ پیش کی۔

انہوں نے ایسے تمام شادی ہالز مالکان جو غیر قانونی طور پر شادی ہالز چلا رہے ہیں انہیں 24 گھنٹے کی مہلت دیتے ہوئے کہا کہ وہ ازخود اپنے غیر قانونی شادی ہالز کو ختم کردیں ورنہ اب جو کارروائی کی جائے گی۔

اس میں ان شادی ہالز کو مسمار کرنے کے ساتھ ساتھ تمام سامان بھی ضبط کرلیا جائے گا اور ان مالکان کے خلاف ایف آئی آر کا بھی اندراج کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اس شہر اور صوبے کو سرسبز، شاداب اور پرامن صوبہ بنانے کا جو عزم ہم نے کیا ہے اس کو پورا کرکے ہی دم لیں گے اور تمام تجاوزات کا خاتمہ ہماری اولین ترجیح ہے اور اس سلسلے میں کسی بھی سفارش کو قبول نہیں کیا جائے گا اور یہ کارروائی بلاامتیاز کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top