فوجی عدالتوں کودہشتگردی کے12کیسزموصول، آئی ایس پی آر -
The news is by your side.

Advertisement

فوجی عدالتوں کودہشتگردی کے12کیسزموصول، آئی ایس پی آر

راولپنڈی: دہشتگردی کےبارہ مقدمات فوجی عدالتوں کوموصل ہوگئے، صوبائی حکومتوں نےفوجی عدالتوں کےلئےکیسزوزارت داخلہ کوبھجوائےتھے۔

آئی ایس پی آرکےمطابق آئینی ترمیم کےبعدفوجی عدالتوں کووزارت داخلہ کی جانب سےبارہ مقدمات موصول ہوگئے، صوبائی ایپکس کمیٹیوں نےمقدمات وزارت داخلہ کوبھجوائےتھے،جن کی چھان بین کےبعدانہیں فوج کوبھجوایاگیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ کے ایک ٹوئٹ کے مطابق یہ تمام کیس ایپکس کمیٹی نے چھان بین کے بعد وزارت داخلہ کو بھجوائے ہیں جس نے ان مقدمات کو فوجی عدالتوں کو بھجوا دیا ہے۔ ابتدائی طور پر بارہ مقدمات فوجی عدالتوں کو ارسال کردیے گئے ہیں۔

 

ذرائع کےمطابق پہلےمرحلےمیں39مقدمات فوجی عدالتوں کےلئےمنتخب ہوئےہیں، جن کیلئےقانونی عمل شروع کردیاگیاہے، فوجی عدالتوں کےقیام کافیصلہ اسلام آباد میں وزیراعظم کی زیرصدارت کل جماعتی کانفرنس میں سیاسی جماعتوں اورعسکری قیادت نےمتفقہ طور پر2جنوری کوآرمی ایکٹ میں ترمیم کرکےفوجی عدالتوں کےقیام کافیصلہ کیاتھا۔

 جس کےبعدپارلیمنٹ میں21ویں ترمیم کی منظوری متفقہ طور پردی گئی تھی، ملک میں 9فوجی عدالتیں قائم کی گئی ہیں جن میں پنجاب اور صوبہ خیبر پختونخوامیں تین تین، سندھ میں دوجبکہ بلوچستان میں ایک فوجی عدالت قائم کی گئی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں