قائد الطاف حسین سے متعلق ریمارکس،ایم کیو ایم ارکان کا سینیٹ سے واک آؤٹ -
The news is by your side.

Advertisement

قائد الطاف حسین سے متعلق ریمارکس،ایم کیو ایم ارکان کا سینیٹ سے واک آؤٹ

سینیٹ میں ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین سے متعلق ریمارکس پر پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کے ارکان میں سخت الفاظ کا تبادلہ ہوا، جس کے بعد ایم کیو ایم کے ارکان واک آؤٹ کرگئے، اجلاس بدھ کی شام تک ملتوی کردیا گیا۔

سینیٹ اجلاس میں الطاف حسین سے متعلق ریمارکس پر ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کے ارکان میں جھڑپ نے ماحول گرما دیا، پیپلزپارٹی کے کریم خواجہ کا کہنا تھا کہ برطانوی حکومت بیان کا نوٹس لے اور کاروائی کرے، جس پرمتحدہ قومی موومنٹ کے عبدالحسیب اور دیگر ارکان نے شدید احتجاج کیا اورایوان سے باہرچلے گئے۔

غداری کیس پر بات کرتے ہوئے ن لیگ کے مشاہد اللہ خان کا کہنا تھا کہ آمر کی حمایت نہ کی جائے، حکومت نے فرض پورا کیا اور معاملہ عدالت میں ہے، اسپتال میں زیرعلاج مشرف پراپرٹی ڈیلنگ کررہے ہیں۔

ملک میں امن وامان کی صورتحال پرفرحت اللہ بابرکا کہنا تھا کہ پاک افغان کراس بارڈرعسکریت پسندی کا مسئلہ حل کرنا ہوگا، لاپتہ افراد کے حوالے سے سیکیورٹی اداروں کو پارلیمنٹ کے ماتحت لایا جائے، غیرقانونی اقدام پراحتساب ہونا چاہیے۔
   

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں