قوم کے ایک ارب روپے سے منگوائے گئے سکینرز بے کار -
The news is by your side.

Advertisement

قوم کے ایک ارب روپے سے منگوائے گئے سکینرز بے کار

پشاور: وزارت داخلہ نے وزیراعظم کی ہدایت کے باوجود کے پی کے حکومت کو 6 ماہ سےموبائل اسکینر فراہم نہیں کئے۔

پشاور پولیس کے مطابق موبائل اسکینرز ستمبر 2014سے پولیس لائن اسلام آبادمیں بیکار پڑے ہیں، اسکینرز مہمند ایجنسی، خیبر ایجنسی درہ آدم خیل، باڑہ جمرود اور دیگر حساس علاقوں کیلئے منگوائے گئے تھے۔،

،پولیس ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت اسکینرزکے پی کے حکومت کو دینے کے بجائےدوسرے محکموں کوفراہم کررہی ہے، ان کا کہنا تھا کہ اہم چیک پوسٹوں پر موبائل اسکینرزہوتے تو آرمی پبلک اسکول ، امام بارگاہ حملہ اوردہشتگردی کے دیگرواقعات سے بچا جاسکتاتھا۔

 واضح رہے کہ 19اکتوبر 2014 کو 9 حساس علاقوں کیلئے اسکینرزکی سفارش کی گئی تھی حساس علاقوں میں اسکینرز مہمند ایجنسی، خیبر ایجنسی درہ آدم خیل، باڑہ جمروداور دیگر شامل تھے 16سمتبر 2014 کو وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے موبائل اسکینر سے متعلق درخواست کی منظوری دی تھی۔

بعد ازاں 16ستمبر2014 کو نینشنل پولیس بیوروکے ڈپٹی ڈائرئکٹر طاہر علی نے مراسلہ جاری کیاکہ موبائل اسکینرزکا ٹیسٹ 25 سمتبر کو کیاجائے گا، 25سمتبر 2014 کو موبائل اسکینرز کا جانچ پڑتال کیاگیا، 6جنوری 2015 کو اسکنیزن اینٹی نارکوٹکس حکام کے حوالے کئے گئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں