The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کارکنوں کی نظربندی، تفصیلی جواب طلب

لاہور: آئی جی جیل نے لاہورہائیکورٹ میں تحریری رپورٹ جمع کرادی ہے، جس کے مطابق پاکستان عوامی تحریک اور تحریکِ انصاف کے تین ہزار پانچ سو نو کارکن نظر بند کئے گئے جبکہ عدالت نے نظر بندی کی تفصیلی وجوہات طلب کرلیں ہیں۔

لاہور ہائیکورٹ میں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں کی نظربندی سے متعلق سماعت ہوئی،جسٹس قاسم خان  نے کیس کی سماعت کی، عدالتی حکم پر آئی جی جیل پنجاب پیش ہوئے اور بتایا کہ اس وقت صوبے بھر میں پانچ سو اکیاون افراد نظر بند ہیں، جن میں تحریکِ انصاف کے دو سو پچیس، پاکستان عوامی تحریک کے تین سو نو ، گلوبٹ اور دیگر شامل ہیں۔

عدالت نے استفسار کیا کہ بتایا جائے اِن افراد کو کیوں نظربند کیا گیا؟ آئی جی جیل نے کہا ہے کہ کسی کو بھی سیاسی بنیاد پر نظربند نہیں کیا گیا ہے۔

عدالت نے ہوم سیکرٹری پنجاب کو 551 کارکنوں کی رہائی سے متعلق پچیس ستمبر تک فیصلے کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے حکم دیا کہ عدالتی حکم پر عمل نہ کیا گیا تو پھر پنجاب حکومت کو تمام نظر بند کارکنوں کو ڈیلی ویجز کی ادائیگی کا حکم جاری کریں گے اور سماعت پچیس ستمبر تک ملتوی کردی۔

دوسری جانب لاہور ہائی کورٹ نے ایک دوسرے کیس میں آئی جی پنجاب اور وزیرِ قانون پنجاب رانا مشہود کے خلاف توہین عدالت کی درخواست مسترد کردی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں