لاہور: محمد نعیم دہشت گرد نہیں تھا، قاتلوں کو گرفتارکیا جائے، بھائی -
The news is by your side.

Advertisement

لاہور: محمد نعیم دہشت گرد نہیں تھا، قاتلوں کو گرفتارکیا جائے، بھائی

لاہور :  یوحنا آباد میں دہشت گرد قراردے کر زندہ جلائے جانے والے مقتول محمد نعیم کے بھائی نے تھانے میں درخواست دے دی ۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ لاہور کے بعد  مشتعل ہجوم کی جانب سے دہشت گرد قرار دے کر زندہ جلائے جانے والے محمد نعیم کے بھائی محمد سلیم نے  نشتر تھانے میں درخواست جمع کرادی ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیاگیا ہے کہ محمد نعیم دکاندار تھا،اور اس کا دہشت گردوں سے کوئی  تعلق نہیں ،اس کے قتل میں ملوث عناصر کیخلاف مقدمہ درج کر کے ملزمان کو گرفتار کیا جائے۔

محمد نعیم کےپڑوسی کا کہنا ہے کہ حافظ قرآن کو باریشں ہونے کی سزاد ی گئی۔ دوسری جانب مقتول محمد نعیم کے دوست کا کہنا ہے کہ یوحنا آباد میں ظلم کی تاریخ رقم کی گئی۔

محمد نعیم کے دوست رانا محمد عباس نے سانحہ یوحنا آباد پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے شرپسندوں کی طرف سے حملوں کو روکنے میں ناکامی کا ذمہ دار حکومت کو قراردیا۔

 پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے کی تحقیقات کے بعد ذمہ داران کیخلاف  ایف آئی آر کا اندراج کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں