site
stats
اہم ترین

مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود میں کمی کا مطالبہ مسترد

آئی ایم ایف کا دباؤ کام کرگیاشرح سود میں کمی کا تاجروں کا مطالبہ اس باربھی مسترد۔ معاشی بہتری کےباوجوداسٹیٹ بینک نے آئندہ دوماہ کیلئےبنیادی شرح سود دس فیصد رکھنےکا اعلان کردیا۔

ہفتےکوپریس کانفرنس میں گورنراسٹیٹ بینک اشرف محمود وتھرا نےرواں مالی سال کی پہلی مانیٹری پالیسی اورآئی ایم ایف کی شرط پوری کرنےکیلئےبورڈاجلاس کی کارروائی کےمنٹس شائع کرناکااعلان کیا۔

گورنراسٹیٹ بینک کا کہنا تھاکہ جون میں ختم ہوئےمالی سال کی معاشی صورتحال پہلےسےبہتررہی مہنگائی کی شرح مسلسل دوسرےسال دس فیصد سے کم رہی۔ رواں مالی سال مہنگائی بڑھنےکی شرح7.5سے8.5 فیصد کےدرمیان رہےگی۔

گورنراسٹیٹ بینک نےبتایاکہ مالی سال2014 میں نجی شعبےکے قرضوں میں نمایاں اضافہ ہوا جو چھے سال کی بلند سطح پرپہنچ گئے۔

اُن کاکہناتھاکہ ٹیکس اصلاحات سےبجٹ خسارےمیں کمی آئی۔تاہم ایف بی آرٹیکس وصولی کا2810ارب روپےکاہدف مشکل لگتاہے۔

اشرف محمود وتھراکےمطابق معاشی اہداف میں بہتری سےروپے کی قدرمیں اضافہ ہوا۔۔نجکاری سےبیرونی کھاتے مزید بہتر اور کرنٹ اکاؤنٹ پردباؤکم ہوگا۔۔تاہم معاشی اصلاحات میں پیشرفت ضروری ہے۔

گورنراسٹیٹ بینک کایہ بھی کہناتھاکہ توانائی بحران اورامن وامان کی غیرتسلی بخش صورتحال کےباوجود گزشتہ مالی سال پاکستان کی معیشت نے4.1 فیصد کی شرح سےترقی کی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top