site
stats
اہم ترین

مذاکرات کے لئے آئندہ اڑتالیس گھنٹے اہم ہیں، چوہدری نثار

اسلام آباد:وفاقی وزیر داخلہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پارٹیوں کی آزادی وزارت ِ داخلہ کی ناک شروع ہونے سے پہلے ختم ہوجاتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دونوں پارٹیاں عورتیں اور بچوں کو حفاظتی ڈھال کے طور ہر استعمال کررہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتوں کی جانب سے روز کنٹینرز ہٹانے کا مطالبہ کیا جاتا ہے لیکن وہ واضح کرنا چاہتے ہیں کہ دھرنے کے شرکاء پاکستان کے شہری ہیں اوران کی حفاظت کی ذمہ داری وزارت ِ داخلہ کی ہے لہذا کنٹینر نہیں ہٹائے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ لوگ آر ہے ہیں جارہے ہیں، انہیں بتایا جائے کہ کس مقام پر لاٹھی چارج ہوا ، یا دھرنے میں شامل کسی شخص کو روکا گیا ہو۔

Chaudhary Nisar addresses press conference on… by arynews
انہوں نے انکشاف کیا کہ آئی ایس آئی کی اطلاعات کے مطابق دھماکہ خیز مواد سے لبریز ایک گاڑی دھرنے کے شرکاء کو نشانہ بنانا چاہتی ہے ۔ عمران خان اور ڈاکٹرطاہر القادری اگر تحریری طور پر لکھ کردے دیں کہ حفاظت کی ذمہ داری دونوں افراد خود لیتے ہیں تو کنٹینر ہٹالئے جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے مظاہرین کو کسی مقام پر نہیں روکا لیکن اگر قانون شکنی ہوئی تو پھر قانون اپنے دفاع کے لئے حرکت میں آئے گا۔ کسی کو بھی حساس عمارتوں پر حملے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ بامقصد مذاکرات کے لئے ہر وقت تیار ہیں اور مظاہرین کے آئینی مطالبات پر غور کیا جارہا ہے، ان کا کہنا تھا کہ مثبت اشارے مل رہے ہیں اور امید ہے کہ آئندہ اڑتالیس گھنٹوں میں بہتری کی جانب پیش رفت ہوگی۔

انہوں نے پاک افواج سے اظہار ِ یکجہتی کرتے ہوئے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ فوج جو پہلے ہی حالت ِ جنگ میں ہے اسے اس مشکل صورتحال سے باہر نکالیں تا کہ پاک فوج اپنی آئینی ذمہ داریوں پر بھرپور توجہ دے سکے۔

چوہدری نثار نے وکلاء کے کردار کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت کے دفاع کے لئے وکیلوں کی جدو جہد ایک شاندار مثال ہے۔

چوہدری نثار نے دھرنے اور احتجاج کی باعث اسٹاک مارکیٹ میں ہونے والی مندی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال سے روپے کی قدر متاثر ہورہی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top