The news is by your side.

Advertisement

مستونگ سانحہ: لواحقین میتوں سمیت وزیرِاعلی ہاؤس کے سامنے سراپا احتجاج

کوئٹہ : مستونگ کے المناک سانحے میں جاں بحق افراد کے لواحقین میتوں سمیت وزیراعلی ہاؤس کے سامنے سراپا احتجاج بن گئے۔ وزیراعلی ہاؤس میں داخل ہونیکی کوشش پر پولیس غمزدہ مظاہرین پر ٹوٹ پڑی۔

مستونگ میں دہشتگردوں نے بیگناہوں کےخون سے ہولی کھیلی، المناک واقعے میں جاں بحق افراد کے صدمے سے نڈھال لواحقین لاشیں گھر لے جانے سے انکار کرتے ہوئے سراپا احتجاج بن گئے۔

شہداء کی میتیں لیے بے بسی کی تصویر بنے لواحقین وزیراعلی ہاؤس پہنچے اور حکومتی بے حسی کیخلاف دھرنا دیا تاہم جب وزیراعلی بلوچستان ڈاکٹر عبد المالک بلوچ وزراء کے ہمراہ دھرنےکےشرکاء سے مزاکرات کیلئے پہنچے تو مظاہرین نےحکومت کیخلاف نعرے بازی کی۔

جس پر وزیرِاعلی واپس چلے گئے، مظاہرین کیجانب سے وزیر اعلی ہاؤس میں داخل ہونیکی کوشش پر پولیس نے غمزدہ مظاہرین پر لاٹھی چارج کرتے ہوئے آنسو گیس کے شیل برسائے، جس کے بعد مظاہرین منتشر ہو گئے۔

واقعہ کیخلاف کوئٹہ میں تین روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا، پشین سمیت مختلف شہروں میں بھی شٹر ڈاؤن ہڑتال کی جارہی ہے، مختلف دینی و سیاسی جماعتوں نے بھی کل صوبہ بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی کال دیدی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں