site
stats
انفوٹینمنٹ

مسلسل رات کی شفٹ میں کام صحت کیلئےانتہائی مہلک

رات کی شفٹ میں متواتر کام کرنے سےدماغی صلاحیت کند جبکہ جسم کےدیگر اعضا بھی بری طرح متاثر ہوتے ہیں۔

سال بھر رات کی شفٹ میں کام کیا جائےتودماغی صلاحیتوں میں چھ سال سے زیادہ بڑھاپا آجاتا ہے۔

رات دیر تک جاگنے سے انسانی اعضا کو قدرتی بدنظمی کا سامنا کرنا ہوتا ہے جس سے اعضا کو کام بھی دگنا کرنا پڑتا ہے۔

نیند نہ پوری ہونے سے بینائی پرمنفی اثرات پڑتے جبکہ گردے اورلبلبہ بھی بری طرح متاثر ہوتا ہےجس سے ذیابیطس کےخدشات بھی بڑھ جاتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top