The news is by your side.

Advertisement

مصباح الحق کی شاندار کارکردگی، ناصر جمشید بدستور ناکام

نیپیئر : پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کی عمدہ کارکردگی کا سلسلہ جاری ہے۔انھوں نے چار میچز میں تین نصف سینچریاں بنا ڈالیں۔

گراونڈز کے چاروں طرف شاندارشارٹس لگانے والے مصباح الحق نے ایک بار پھر کپتان ہونے کا حق ادا کردیا۔ میانوالی سے تعلق رکھنے والے مصباح الحق کی بیٹنگ نرالی ہے۔

ورلڈکپ میں ہمیشہ بیٹنگ لائن نے دھوکادیا ،چلا توصرف کپتان کا بلا۔ بھارت کے خلاف پہلے میچ میں کپتان نے عمدہ اننگ کھیلی اور چوہتر رنز بنائے۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف تو قسمت نے ساتھ نہ دیا ۔ لیکن زمبابوے کے خلاف مصباح الحق مرد بحران ثابت ہوئے اور تہتر رنز بناکر پاکستان کی ڈوبتی کشتی کو کنارے تک پہنچایا۔

یو اے ای کے خلاف میدان میں اترے کپتان تو پھر گراونڈ کے چاروں طرف کُھل کر شارٹس کھیلے اور ورلڈ کپ میں تیسری نصف سینچری بناڈالی۔اور مجموعی طور پر پینسٹھ رنز اسکور کئے۔

دوسری جانب متحدہ عرب امارات کے خلاف اگر نہیں چلے تو صرف ناصر جمشید۔ ناصر نے چھوٹی ٹیم کے خلاف بھی نہ چلنے کی اپنی پرانی روایت کو برقرار ہی رکھا۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف صفر۔ زمبابوے کے خلاف صرف ایک رن اوریو اے ای کے خلاف تو کمال ہی ہوگیا۔۔ناصر جمشید نے بدترین پرفارمنس کی ہیٹ ٹرک کرلی۔ ناصر جمیشد کی وکٹ لینا بولرز کے لئے آسان ٹارگٹ ہوگیا ۔

تین میچز اور صرف پانچ رنز۔ چلے ہوئے کارتوس کو کتنا آزمایا جائے گا۔ناصر پر اتنی مہربانی کیوں ہورہی ہے؟ اسکواڈ میں کیا ان کی جگہ لینے والا کوئی نہیں؟

چھوٹی ٹیموں کے خلاف ایسی پرفارمنس ہے تو جنوبی افریقہ جیسی بڑی ٹیم کے خلاف مینجمنٹ کو سنجیدگی سے سوچنا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں