site
stats
عالمی خبریں

مصر: اخوان المسلمین کے سربراہ کو 13ساتھیوں سمیت سزائے موت سنادی

قاہرہ: مصر کی ایک عدالت نے کالعدم تنظیم اخوان المسلمین کے رہنماء محمد بیدی کو 13 سینئر ممبران کے ہمراہ سزائے موت سنادی۔

مصرکی سرکاری خبررساں ایجنسی’مینا‘کے مطابق اخوان المسلین جسے 2013 میں کالعدم قراردیا گیاتھا اس کے 14ممبران کو دہشت گرد حملوں کی منصوبہ بندی کے جرم میں سزائے موت سنائی گئی۔

عدالت کے مطابق بیدی اور ان کے ساتھی جن میں اخوان المسلمین کے سابق ترجمان محمود غزلان بھی شامل ہیں، ان سب نے فوج کے ہاتھوں صدرمرسی کا تختۃ الٹے جانے کے بعد آپریشن روم قائم کیا جس میں حکومت کے خلاف دہشت گردی کی کاروائیوں کی منصوبہ بندی کی جاتی تھی۔

اخوان المسلمین کے رہنماؤں کے احمد ہیلمی نے فیصلے کو’مبہم‘قراردیا ہے۔

مقدمے میں کل 51 ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے جن میں سے 14 کو سزا سنائی گئی ہے جبکہ 31 سلاخوں کے پیچھے ہیں۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ باقی ماندہ ملزمان کے مستقبل کا فیصلہ 11اپریل کو ہوگا۔

مصرمیں سزائے موت کے مجرم کو پھانسی کے ذریعے موت کے حوالے کیا جاتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top