مصلحتوں کا انبار شہر کی بدامنی کی بڑی وجہ ہے، سینیٹر شاہی سید -
The news is by your side.

Advertisement

مصلحتوں کا انبار شہر کی بدامنی کی بڑی وجہ ہے، سینیٹر شاہی سید

کراچی : عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر سینیٹر شاہی سید نے کہا ہے کہ مصلحتوں کا انبار شہر کی بد امنی کی بڑی وجہ ہے، شہرکو ایسے حکمرانوں کی ضرورت ہے، جو قیام امن کے لیے مصلحتوں اور سیاسی مفادات سے بالا تر ہوکر سوچے، ہزاروں انسانوں کے قتل کے باوجود آج تک نا قاتلوں کو سزا دینا تو درکنا کوئی ذمہ داران کے لیے لب کشائی کرنے کو تیار نہیں۔

انھوں نے کہا کہ سیاست میں مصلحت اور مفاہمت کوئی بری بات نہیں مگر انسانی جانوں پر مصلحت ظلم عظیم ہے، گزشتہ چند برس میں دس ہزار زائد شہری بدامنی کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں، صرف الزامات بدامنی کی بیماری کی دوا نہیں ہے، نشتر پارک، بارہ مئی، بولٹن مارکیٹ، عاشورہ، عباس ٹاوٴن ، طاہر پلازہ ، محبت سندھ ریلی اور بلدیہ ٹاوٴن جیسے سانحات کے ذمہ داران کے ذمہ داران کو منظر عام پر لانا ریاستی داروں کے لیے زیادہ مشکل نہیں ہے۔

 مردان ہاوٴس میں مختلف پارٹی وفود سے ملاقات کے دوران انہوں نے مزید کہا کہ ماضی میں فیصلے ہوچکے ہیں اب عمل کا وقت ہے،اگر وزیرِاعظم سانحہ بلدیہ ٹاوٴن کے قاتلوں کو بے نقاب کرنے کا تہیہ کرلیں تو ڈھائی سو زائد انسانوں کو زندہ جلانے والوں کوکیفر کردار تک پہنچایا جاسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قانون نافذ کرنے والوں اداروں اور ارباب اختیار سے پوچھنا ہوگا کہ کیوں نیشنل ایکشن پلان پر عمل نہیں کیا جارہا ہے، پے درپے دہشت گردی کے واقعات کے باوجود کیوں سبق حاصل نہیں کیا جارہا ہے، صوبائی حکومت کو شہریوں کے جان و مال کے تحفظ کو اپنی اولین ذمہ داری سمجھنا ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں