The news is by your side.

Advertisement

مطالبات کی منظوری تک اسلام آباد میں بیٹھوں گا، عمران خان

اسلام آباد: عمران خان نے مطالبات کی منظوری تک اسلام آباد میں بیٹھنے کا اعلان کر دیا،ان کا کہنا تھا کہ چودہ اگست کو مطالبات پیش کرینگے،کوئی مارچ نہیں روک سکتا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے حکومت کے معاشی کارکردگی کے جواب میں وہائٹ پیپر جاری کر دیا،عمران خان نے کہا کہ ہمارے مطالبات آئینی اور جمہوری ہیں اور انہیں منوا کر ہی رہیں گے، جب تک انہیں نہیں مانا جائے گا اسلام آباد میں ہی دھرنے دیئے بیٹھے رہیں گے اور میں خود کارکنوں کے ساتھ دھرنے میں رہوں گا، ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے حکمرانوں اور حسنی مبارک ،صدام حسین اور کرنل قذافی میں کوئی فرق نہیں ہے کیونکہ ان کی دولت بھی باہر تھی اور ان کے بچے بھی عیش کررہے تھے۔

عمران خان نے  کہا کہ جمہوریت الیکشن میں نہیں صاف اور شفاف الیکشن میں جمہوریت ہے،چودہ اگست کو بادشاہت اور ڈکٹیٹر شپ کے خلاف جنگ ہے، اگر فوج آئی تو اس کے ذمہ دار نواز شریف ہوں گے، پنجاب میں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں کے خلاف پولیس کریک ڈاؤن کی شدید مذمت کر دی، انہوں نے کہا کہ حکومت علامہ طاہر القادری کو دیوار سے لگانے کی کوشش کر رہی ہے،پنجاب میں علامہ طاہر القادری کیساتھ بڑا ظلم ہو رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں