The news is by your side.

Advertisement

معروف مصنف ناول نگارعبداللہ حسین 84 برس کی عمر میں انتقال کر گئے

لاہور: معروف مصنف ناول نگار عبد اللہ حسین چوراسی برس کی عمر میں انتقال کر گئے وہ کینسر کے عارضے میں مبتلا تھے۔

عبداللہ حسین کینسر میں مبتلا ہونے کے باعث کئی روز سے لاہور کے نجی اسپتال میں زیرعلاج تھے مگر جانبر نہ ہو سکے۔ عبداللہ حسین کی عمر چوراسی برس تھی۔

وزیراعظم نواز شریف نے عبداللہ حسین کے انتقال پر دلی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کی اردو زبان کو پروان چڑھانے کے لئے خدمات کو سراہا ہے۔

 وزیراعظم نے اپنے تعزیتی بیان میں کہا کہ قومی زبان کی ترقی اور اردو ادب کیلئے عبداللہ حسین نےگراں قدر خدمات انجام دیں عبداللہ حسین کی وفات ملک اور ادبی حلقوں کیلئےبڑا نقصان ہے، عبداللہ حسین کے مشہور ناولز میں باگھ، فریب، قید، نشیب، نادار لوگ اور رات شامل ہیں۔

بعض اوقات تاریخ میں بڑے واقعات اور شہہ پاروں کی تخلیق کی وجہ بہت معمولی باتیں بنتیں ہیں، مگر یہ تاریخ بن جاتے ہیں، عبداُللہ حُسین کے ناول اُداس نسلیں کی تخلیق کا معاملہ بھی کُچھ ایسا ہی ہے۔

اُداس نسلیں کے خالق عبداللہ حُسین داود خیل کی فیکٹری میں کیمسٹ تھے، وقت گذارنے کیلئے اُنہوں نے ایک رومانوٰ ی کہانی لکھنی شروع کی، جس کا اختتام اُداس نسلیں کے نام سے ایک ناول پرہوا، اسے پاکستان کا پہلا ناول بھی کہا جاتا ہے۔ جس کی بُنت برصغیر کی تقسیم اور اس سے پیدا ہونے والے مسائل کے حوالے سے ہے ۔

دلچسب بات یہ ہے جس وقت یہ ناول لکھا گیا اُس وقت عبداللہ حُسین کی اُردو زبان سے دسترس واجبی سی تھی، مگراُنہوں زبان سے زیادہ حقیقت نگاری پر توجہ دی، جب یہ ناول شائع ہوا اس میں موجود گالیوں کی وجہ سے اسے ہدف تنقیدبھی بنایا گیا۔

 اس ناول کی اب تک برقرار مقبولیت یہ ثابت کرنے کیلئے کافی ہے کہ پچاس برس پہلے لکھا جانے والے اس ناول نے ہرنسل کو متاثر کیا ہے۔

عبداللہ حسین کو حکومت پاکستان کی جانب سے ان کی صلاحیتوں کے پیش نظر انھیں 2012 میں پاکستان کے سب سے بڑے لٹریچر ایوارڈ ’کمال فن‘ سے نوازا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں