The news is by your side.

Advertisement

ممبئی بم حملوں کے الزام میں گرفتار یعقوب میمن کی پھانسی پر ججز میں اختلاف

نئی دلی: بھارت کی سپریم کورٹ نے انیس سو ترانوے کے ممبئی بم حملوں کے الزام میں گرفتار یعقوب میمن کی سزائے موت پر عمل درآمد کے خلاف اپیل مسترد کردی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق سپریم کورٹ نے انیس سو ترانوے کے ممبئی حملوں کے الزام میں گرفتار یعقوب میمن کی جانب سے سزائے موت پر عمل درآمد روکنے کے خلاف اپیل مسترد کرتے ہوئے ان کی سزا کو برقرار رکھا ہے۔

بھارتی سپریم کورٹ کے مطابق عدالت نے ٹاڈا قوانین کے مطابق یعقوب میمن کو بالکل ٹھیک سزا سنائی ہے اور اب یعقوب میمن اپنی سزا کے خلاف اپیل نہیں کر سکتے، لہذا ان کی سزائے موت پر تیئس جولائی کو عمل درآمد کر دیا جائے گا۔

ٹائیگر میمن کے بھائی یعقوب میمن کو 1993ء میں ممبئی میں ہونے والے حملے کے لیے پھانسی کی سزا دی گئی تھی جسے ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ دونوں نے بحال رکھا۔

سزائے موت کے خلاف درخواست کی سماعت کرنے والے ایک جج کا کہنا ہے کہ درخواست کی نئے سرے سے سماعت کی جانے کی ضرورت ہے کیونکہ ان کی اپیل کو بغیر درست ضابطے پر عمل کیے مسترد کر دیا گیا ہے۔ سپریم کورٹ کا لارجر بینچ سزائے موت روکنے کی درخواست کی کل سماعت کرے گا۔

دوسری جانب یعقوب میمن نے اپنی سزا کے خلاف صدر سے رحم کی اپیل کردی ہے۔

یعقوب میمن کی سزائے موت کے خلاف بالی ووڈ سپر اسٹار سلمان خان نے بھی اپنے ٹویٹر پیغام میں یعقوب میمن کی سزا پر اپنے ردعمل کااظہارکرتے ہوئے کہا تھا کہ ایک انسان کا قتل پوری انسانیت کا قتل ہے جس پر بھارت میں بڑے پیمانے پر ان کے اس بیان کی مخالفت کی گئی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں