The news is by your side.

Advertisement

ممکنہ ماورائے آئین اقدام،حکومت سے20اگست تک جواب طلب

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے ممکنہ ماورائے آئین اقدامات کیخلاف پٹیشن پر حکومت سے بیس اگست کو تفصیلی جواب طلب کرلیا ہے۔

سپریم کورٹ میں ممکنہ ماورائے آئین اقدامات کیخلا ف درخواست کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں عدالتی بینچ نے کی، جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ آئین کے آرٹیکل پانچ اور چھ کے تحت کیا کوئی فرد یا ادارہ غیرآئینی اقدام کرنے کی جرات کرسکتا ہے۔

جس پر درخواست گزار سپریم کورٹ بار کے صدر کامران مرتضی نے بتایا کہ آئین کےتحت کوئی جرات نہیں کرسکتا لیکن پھر بھی ایسا امکان نظر آرہا ہے، دارالحکومت کے ریڈ زون کی طرف بڑھنے کا اعلان کیا گیا ہے، ریڈ زون میں سفارتخانے بھی ہیں جنکی حفاظت ضروری ہے۔

چیف جسٹس ناصر الملک نے ریمارکس دیئے کہ یہ معاملات حکومت کے ہیں وہ خود نمٹ لے گی، عدالت نے پٹیشن پرحکومت سے تفصیلی جواب طلب کرتے ہوئے سماعت بدھ تک ملتوی کردی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں