The news is by your side.

Advertisement

منی میں مناسکِ حج کا آغاز ہوگیا

منی: دنیا بھر سے حجاج کرام اپنے رب کی کبریائی بیان کرتے ہوئے سعودی عرب پہنچ گئے، جہاں جمرات کی شام غروبِ آفتاب کے ساتھ ہی منیٰ میں حج کے مناسک شروع ہوگئے ہیں۔

کل سے غروبِ آفتاب کے ساتھ مناسک حج کا آغاز ہوگیا، حجاج کرام منیٰ میں عبادات میں مصروف ہیں، جمعہ کو عازمین حج میدانِ عرفات کیلئے روانہ ہونگے، جو حج کا رکن اعظم ہے، میدانِ عرفات میں خطبہ حج کے بعد ظہر اورعصر کی نماز ملاکر پڑھی جائیگی۔

حجاج مغرب سے پہلے مزدلفہ کی طرف روانہ ہونگے، جہاں وہ مغرب اور عشاء کی نماز اکٹھا پڑھیں گے، مزدلفہ میں ہی حجاج کرام شیطان کو کنکریاں مارنے کیلئے کنکریاں اکٹھی کرینگے، رات مزدلفہ میں گزارنے کے بعد چار اکتوبر کی صبح حجاج کرام منیٰ واپس روانہ ہونگے جہاں وہ رمی جمارکرینگے۔

شیطان کو کنکریاں مارنے کے بعد حجاج کرام اللہ کی راہ میں جانور قربان کرینگے، سر منڈوائیں گے اور احرام کھول کر عام لباس پہنیں گے، مزید دو روز منیٰ میں ہی قیام کے بعد چار اکتوبر کو ہی حجاج کرام بیت اللہ کے طواف کیلئے مکہ مکرمہ جائینگے۔

اتوار کو دوبارہ رمی جمار کریں گے اور پورا دن اور رات عبادت میں گزاریں گے، چھ اکتوبر کو آخری بار تینوں شیطانوں کوکنکریاں مارنے کے بعد حجاج مغرب سے پہلےمنیٰ کی حدود سے نکل جائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں