site
stats
اہم ترین

موجودہ حکمرانوں کے ہوتے ہوئے انصاف ملنے کی توقع نہیں ہے، طاہرالقادری

اسلام آباد :  ڈاکٹر علامہ طاہرالقادری کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمرانوں نے لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے ۔

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹرعلامہ طاہرالقادری کا انقلاب مارچ کے شرکاء سے خطاب میں کہنا تھا کہ حکومت ہمارے خلاف اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرہی ہے۔ہمارے 25 ہزار کارکنان تاحال لاپتہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس ملک میں آئین تباہ ہوچکا ہے جمہوریت ختم ہوچکی ہے، حکمرانوں لوڑ مار کی انتہا کردی ہے ، جھوٹے مینڈیٹ والے جمہوریت کا رونا روتے ہیں، موجودہ حکمرانوں کے ہوتے ہوئےانصاف کی توقع نہیں ہے ، یہ حکمران ہٹلر اور مسیلنی سے بھی بد تر ہیں۔

ڈاکٹر طاہرالقادری نے پاکستان عوامی تحریک کے نائب صدر میاں ساجد کےگھر ڈاکے کے واردات کی بھر پور مزمت کرتے ہوئے کہنا تھاکہ حکمرانوں نے ظلم کی انتہاکردی ہے۔ہمارے صبر کو مزید نہ آزمایہ جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ میں کسی ارکان آڈٹ نہیں ہوتا ، موجودہ حکمرانوں نے بینکوں سے کڑوڑوں روپے قرضے لے کر معاف کروائیں ہیں، جعلی نمائندوں کو کڑوڑوں روپے کے فنڈ جاری کئے جاتے ہیں۔

طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ 35 سال سے ایک کنال کے گھر میں ہوں، مجھ پر منی لانڈرنگ کا الزام لگانے والے الزام ثابت نہ کرسکے، یہ حکمران جانتے ہیں کہ اگر انقلاب آگیا تو ان کی لوٹ مار ختم ہوجائے گی۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک میں حکومت دہشت گردوں اور چوروں کی ہے اور ان کی موجودگی میں سانحہ ماڈل ٹاون کے شہداءکو انصاف نہیں مل سکتا لہذا ان کو گھر جانا ہی ہو گاجبکہ اب یہ حکمران میری رہائش گاہ پر حملہ کرنا چاہتے ہیں مگر میں پیچھے ہٹنے والا نہیں ہوں۔

انہوں نے کہا کہ آج نواز شریف کا ساتھ دینے والے ان کی کرپشن میں بھی حصے دار ہیں اور ان سے حساب لیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ جھوٹا مینڈیٹ حاصل کرکے جھوٹی جمہوری حکومت بنانے والے آج جمہوریت کا رونا رو رہے ہیں مگر ملک میں آئین اور قانون کی معطلی پر خاموش ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top