site
stats
اہم ترین

مکہ مکرمہ میں غلافِ کعبہ تبدیل

مکہ مکرمہ: خالص سونے، چاندی کے تاروں اور ریشم سے تیار کردہ غلاف کعبہ تبدیل کر دیا گیا ہے۔

مکہ مکرمہ میں غلافِ کعبہ کی تبدیلی کی روح پرور تقریب ہوئی، جس میں غلافِ کعبہ کو امام کعبہ شیخ عبدالرحمان السدیس نے مسجد الحرام کے کلید بردار شیخ عبدالقادرالشیبی کے حوالے کیا، غلافِ کعبہ پہلی مرتبہ مکمل طور پر سعودی عرب میں تیار کیا گیا ہے۔

نیا غلافِ کعبہ ایک سو پچاس کلوگرام سونے اور چاندی سے تیار کیا گیا ہے، جس پر بیس ملین سعودی ریال کی لاگت آئی ہے، غلافِ کعبہ کی تبدیلی کی تقریب ہرسال نو ذی الحج کو وقوفِ عرفہ کے روز ہوتی ہے۔

تاریخ میں پہلی مرتبہ فتحِ مکہ کی خوشی میں خانہ کعبہ پر سیاہ غلاف چڑھایا گیا تھا، اتارے جانے والے غلافِ کعبہ کسوہ کو ٹکڑوں کی شکل میں بیرونی ممالک سے آئے ہوئے سربراہان مملکت اور دیگر معززین کو بطور تحفہ پیش کردیا جاتا ہے۔

امام کعبہ اور حرمین شریفین کے نگران شعبے کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس کا کہنا ہے کہ غلافِ کعبہ پہلی مرتبہ مکمل طور پر سعودی عرب میں تیار کیا گیا، اس سے قبل مسلم ممالک سے تیار کروایا جاتا تھا۔

غلافِ کعبہ کی تیاری میں چھ سو ستتر کلو گرام خالص ریشم استعمال کیا گیا اور قرانی آیات کی تزئین کے لئے سونے اور چاندی کے تار استعمال کیے گئے جبکہ جدید مشینوں کے زریعے قرانی آیات غلاف کعبہ پرکنداں کی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top