The news is by your side.

Advertisement

میسی کو گولڈن بال دینے کا فیصلہ متنازع ہوگیا

  ری ڈی جنیرو: فیفا ورلڈ کپ دوہزار چودہ کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ متنازع ہوگیا، ارجنٹائن کے لائنل میسی کو ایوارڈ دینے کے فیصلے کو فیفا کے صدر سلیپ بلاٹنے بھی حیرانگی کا اظہار کیا ہے۔

فیفا ورلڈ کپ دوہزار چودہ میں ارجنٹینا کے کپتان لائنل میسی کو گولڈن بال دینے کا فصیلہ فیفا کے صدر سیپ بلاٹر کے بیان کے بعد متنازع ہوگیا ہے، ورلڈ کپ ایوارڈز کے لیے کھلاڑیوں کا انتخاب فیفا کا ٹیکنیکل اسٹڈی گروپ کرتا ہے لیکن میسی کو ایوارڈ دیئے جانے پر فیفا پر کڑی تنقید کی جارہی ہے۔

ارجنٹینا کے سابق کپتان ڈیاگو میراڈونا نے تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کہ میسی اس انعام کے مستحق نہیں تھے، انہوں نے کہا کہ یہ ایوارڈ کولمبیا کے اسٹرائیکر ہیمز روڈریگیوز کو ملنا چاہیے تھا، جنہوں نے ایونٹ میں سب سے زیادہ گول بنائے، میراڈونا نے کہا کہ ایوارڈ ملنے پر میسی کے چہرے پر کوئی خیالات نہیں تھے، میراڈونا کے بعد فیفا کے صدر سلیپ بلاٹر نے بھی میسی کو ایوارڈ دیئے جانے پر حیرانگی کا اظہار کیا ہے۔

ری ڈی جنیرو میں نیوز کانفرنس کے دوران سلیپ بلاٹر سے گولڈن بال ایوارڈ کے بارے میں سوال کیا گیا تو وہ ہس پڑے، ان کا کہنا تھا کہ جب میسی کو یہ گولڈن بال کا ایوارڈ ملا انہیں بھی اتنی ہی حیرانگی ہوئی جتنی سب کو ہوئی تھی، میسی نے ورلڈ کپ میں چار گول بنائے تھے اور ٹیم کو فائنل تک پہنچانے میں بھی میسی کا کردار اہم تھا۔

۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں